مالی سال کے پہلے مہینے میں ایف بی آر کی محصولات میں 10 فیصد کا اضافہ

122
fbr issued income tax returns forms

اسلام آباد: فیڈرل بیورو آف ریونیونے اعلان کیا ہے کہ رواں مالی سال کے پہلے مہینے جولائی میں ایف بی آر کی محصولات میں 10 فیصد کا اضافہ ہوا ہے جب کہ ٹیکس وصولیوں میں اضافے کے لیے ایف بی آر نے نادرا سے مدد بھی طلب کرلی ہے۔

ایف بی ایریا کی جانب سے جاری اعلامیے میں بتایا گیا ہے کہ رواں مالی سال کے پہلے مہینے میں مجموعی طور پر 443 ارب روپے ٹیکس وصولیوں کا ہدف مختص کیا گیا تھا، جب کہ اس دورانیے میں کل 458 ارب روپے کے محصولات اکٹھے کیے گئے ہیں۔ اعلامیے کے مطابق گزشتہ مالی سال کے مقابلے میں رواں مالی سال کے پہلے مہینے میں اکٹھے ہونے والے محصولات 10 فی صد زیادہ ہیں۔

اعلامیے کے مطابق رواں مالی سال انکم ٹیکس گوشوارے جمع کرانے والوں کی تعداد میں بھی اضافہ ہوا ہے۔ رواں مالی سال 34 لاکھ ٹیکس گزاروں نے انکم ٹیکس گوشوارے جمع کرائے، جب کہ گزشتہ مالی سال میں 30 لاکھ ٹیکس گزاروں نے انکم ٹیکس گوشوارے جمع کرائے تھے۔

دوسری جانب فیڈرل بور ڈ آف ریونیو نے رواں مالی سال 2022-23 کے لیے مقرر کردہ 7 ہزار 470 ارب روپے کی ٹیکس وصولیوں کا ہدف حاصل کرنے کے لیے نادرا سے مدد لینے کا فیصلہ کیا ہے۔

حکام کے مطابق نادرا سے زیادہ اخراجات والے مزید ساڑھے3ہزار افراد کا مکمل ڈیٹا طلب کرلیا گیا ہے جبکہ ٹریک اینڈ ٹریس اور پوائنٹ آف سیل سسٹم سے بھی مدد لینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ٹیکس نیٹ بڑھانے کے لیے غیر ملکی دوروں، مہنگی گاڑیوں، جائداد کی خریداری کا ریکارڈ چیک کیا جائے گا۔  ٹیکس نیٹ بڑھانے کے لیے آڈٹ سسٹم بھی استعمال کیا جائے گا جبکہ ٹیکس نادہندگان کے بینک اکاؤنٹس کی جانچ پڑتال ہوگی۔