دوست ممالک حکومتی اداروں کے حصص خریدنے پر آمادہ ہیں، وزیر خزانہ

124
Friendly countries

اسلام آباد: وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے کہا ہے کہ ڈیفالٹ کے خدشات ختم ہوچکے ہیں، دوست ممالک نے حکومتی ملکیتی اداروں نے حصص خریدنے پر آمادگی ظاہر کی ہے جبکہ آئی ایم ایف سے قرض کی آمد ہفتوں میں مکمل ہوجائے گی۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ آئی ایم ایف کے ڈائریکٹر کی یکم تا 15اگست چھٹی ہے، اس لئے ان سے میٹنگ میں تاخیر ہے، زرمبادلہ ذخائر بڑھانے کیلئے دوست ممالک سے ڈالرز ذخائر کی درخواست کی تھی۔ دوست ممالک نے درخواست یہ کہہ کر رد کردی، کہ پہلے کبھی قرض واپس نہیں کیا گیا۔

مفتاح اسماعیل کا کہنا تھا کہ دوست ممالک نے حکومتی ملکیتی اداروں نے حصص خریدنے پر آمادگی ظاہر کی۔ دوست ملک مدد کرنا چاہتا ہے اور پاکستان کو ایک اچھا سودہ دے رہا ہے، روپے پر دباؤ ایک دو ہفتے میں ختم ہوجائے گا۔ ڈیفالٹ کے خدشات ختم ہوچکے ہیں، اور پالیسی سازوں کو بھی یہ معلوم ہے، جلد پالیسی پلان بنایا جائیگا، درآمدات میں کمی اور برآمدات تین ماہ میں بڑھ جائینگی، آئی ایم ایف ، چین اور سعودی عرب سے پیسے مانگنا تو کچھ اچھا نہیں ہے، آئی ایم ایف سے قرض کی آمد ہفتوں میں مکمل ہوجائے گی۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان میں ڈالر کی آمد جلد ہی آؤٹ فلو سے زیادہ ہوگی اور شرح مبادلہ مستحکم ہوگا۔ سرجری سے کوئی خوش نہیں ہوتا۔ لیکن بعض اوقات یہ ضروری ہوتا ہے ۔