پنجاب سیاسی بحران، حکمران اتحاد کی چیف جسٹس سے فل بینچ بنانے کی اپیل 

134
full bench

لاہور: حکمران اتحاد نے پنجاب میں ڈپٹی اسپیکر رولنگ کیس میں سپریم کورٹ سے فل بینچ بنانے کی اپیل کر دی۔وزیرداخلہ رانا ثنااللہ نے کہا ہے کہ نواز شریف کو سزا سنانے والے ججز ہمارے کیسز نہ سنیں۔

تفصیلات کے مطابق حکمران اتحاد کے مشترکہ و متفقہ اعلامیہ میں چیف جسٹس سپریم کورٹ سے مطالبہ کیا گیاہے کہ وزیراعلیٰ پنجاب کے انتخاب سے متعلق مقدمے کی سماعت فل کورٹ کرے، اعلامیے میں کہا گیا کہ حکمران اتحاد میں شامل تمام جماعتیں چیف جسٹس پاکستان سے پر زور مطالبہ کرتی ہیں کہ وزیر اعلیٰ پنجاب کے انتخاب سے متعلق مقدمے کی سماعت فل کورٹ کرے۔

اعلامیے کے مطابق قرین انصاف ہوگا کہ عدالت عظمیٰ کے تمام معزز جج صاحبان پر مشتمل فل کورٹ ،سپریم کورٹ بار کی نظرِ ثانی درخواست اور دیگر متعلقہ درخواستوں کو ایک ساتھ سماعت کے لئے مقرر کرکے اس پر فیصلہ صادر کرے کیونکہ یہ بہت اہم قومی، سیاسی اور آئینی معاملات ہیں، اس کے نتیجے میں پیدا ہونے والے سیاسی عدم استحکام کی بھاری قیمت قومی معیشت دیوالیہ پن کے خطرات اور عوام مہنگائی، بے روزگاری اور غربت کی صورت ادا کر رہے ہیں۔

حکمراں اتحاد کا کہنا تھا کہ عمران خان بار بار سیاست میں انتشار پیدا کر رہا ہے جس کا مقصد احتساب سے بچنا، اپنی کرپشن چھپانا اور چور دروازے سے اقتدار حاصل کرنا ہے، آئین نے مقننہ، عدلیہ اور انتظامیہ میں اختیارات کی واضح لکیر کھینچی ہوئی ہے جسے ایک متکبر آئین شکن فسطائیت کا پیکر مٹانے کی کوشش کر رہا ہے۔