دنیا کا واحد شہر جہاں موبائل اور ٹی وی استعمال کرنا جرم ہے

950

ورجینیا /پوکاہونٹاس : نئی ٹیکنالوجی پوری دنیا میں ترقی کر رہی ہے۔ آج کا دور ڈیجیٹل ہو گیا ہے۔ اسمارٹ فون ہر کسی کے ہاتھ میں ملتا ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ گھروں میں جدید ٹیکنالوجی کی حامل اشیا موجود ہیں۔

ایسے وقت میں بھی ایک ایسا شہر ہے جہاں کوئی بھی بجلی کا سامان استعمال نہیں کر سکتا۔اس شہر میں لوگوں کے لیے موبائل سے لے کر ٹی وی اور ریڈیو تک سب پر پابندی ہے۔ کوئی بھی ان چیزوں کو استعمال نہیں کرسکتا اور اگر کوئی ایسا کرتا ہوا پایا گیا تو اسے گرفتار کرکے جیل بھیجا جا سکتا ہے۔

یہ شہر امریکہ کی ریاست مغربی ورجینیا میں پوکاہونٹاس کاؤنٹی میں ہے۔ اس کا نام گرین بینک سٹی ہے۔ اس شہر میں تقریباً 150 لوگ رہتے ہیں۔ پورے شہر میں کوئی بھی برقی آلات جیسے موبائل، ٹی وی یا ریڈیو استعمال نہیں کرتا ہے کیونکہ اس میں دنیا کی سب سے بڑی سٹیریبل دوربین موجود ہے۔دی گارڈین میں شائع خبر کے مطابق دنیا کی سب سے بڑی سٹیریبل ریڈیو ٹیلی اسکوپ اس شہر میں موجود ہے۔ اسے گرین بینک ٹیلی سکوپ کے نام سے بھی جانا جاتا ہے۔

یہ دوربین اتنی بڑی ہے کہ فٹ بال کا ایک بڑا میدان اس کی ایک ڈش میں فٹ ہو سکتا ہے۔ اس کی لمبائی 485 فٹ ہے جبکہ اس کا وزن 7600 میٹرک ٹن ہے۔ سب سے حیرت انگیز بات یہ ہے کہ اس دوربین کو ایک جگہ سے دوسری جگہ لے جایا جا سکتا ہے۔ اسی لیے برقی آلات پر پابندی ہے۔یہ سٹیریبل ریڈیو دوربین یو ایس نیشنل آبزرویٹری آف ریڈیو آسٹرونومی کی ملکیت ہے۔ یہ سال 1958ء میں قائم کیا گیا تھا۔ یہاں سے سائنسدان خلا سے زمین پر آنے والی لہروں کا مطالعہ کرتے ہیں۔

یہ دوربین اتنی بڑی ہے کہ یہ 13 ارب نوری سال دور خلا میں بھی سگنل پکڑتی ہے۔ اس لیے اس علاقے میں تمام برقی آلات جیسے ٹی وی، ریڈیو، موبائل پر پابندی ہے۔ کیونکہ ان سے نکلنے والی لہریں خلا سے آنے والی لہروں کو متاثر کرتی ہیں۔