جماعت اسلامی کا بدترین لوڈ شیڈنگ پر کے الیکٹرک ہیڈ آفس پردھرنا دینے کا اعلان

240

کراچی:امیرجماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن نے اعلان کیا ہے کہ کے شدید گرمی اور حبس کے باوجود حکومت اور نیپرا کی بے حسی اور سرپرستی کے خلاف جمعہ یکم جولائی کو 4بجے دن کے الیکٹرک ہیڈ آفس پردھرنا دیں گے۔

ادارہ نور حق میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے حافظ نعیم الرحمن نے کہاکہ بد ترین لوڈشیڈنگ سے عوام کا جینا مشکل بنادیا ہے،روزانہ شہری سڑکوں پر احتجاج کررہے ہیں،عوام کی اذیت ناک کیفیت کے باوجود وفاقی اور صوبائی حکومت کے کان پرجوں تک نہیں رینگ رہی،تمام حکومتی جماعتیں کے الیکٹرک کو سپورٹ کررہی ہیں۔

امیر جماعت اسلامی کراچی کا کہنا تھا کہ کے الیکٹرک کے خلاف پانچ سال سے سپریم کورٹ میں کیس چل رہا ہے، سابق چیف جسٹس نسلہ ٹاور گرانے کے بجائے اگر کے الیکٹرک کی کارکردگی پر توجہ دیتے تو آج لوڈ شیڈنگ کا یہ حال نہیں ہوتا۔

انہوں نے مزید کہاکہ ملک کے وزیر پانی و بجلی کہتے ہیں کہ ملک ٹھیک چل رہا ہے،مگر کراچی کو کیا دیا جاتا ہے اس سے کسی کو غرض نہیں،ہم ٹیکس اور بل دیتے ہیں مگر اس کے باوجود کراچی والوں کے ساتھ نا انصافی کی جارہی ہے۔

حافظ نعیم الرحمن کا کہنا تھا کہ فیول ایڈجسٹمنٹ کے نا م پر صارفین سے اربوں روپے لیے جاتے ہیں لیکن ایک بھی پلانٹ فرنس آئل پر نہیں چلایا جاتا،حکومتی جماعتیں بتائیں کہ کے الیکٹرک کو بغیر کسی معاہدے کے گیس کی سپلائی کیوں کی جارہی ہے؟

امیر جماعت اسلامی کراچی نے کہاکہ ہم چیف جسٹس آف پاکستان سے اپیل کرتے ہیں کراچی کے ساڑھے تین کروڑ عوام کا مسئلہ حل کروائیں اور عوام کو کے الیکٹرک  کے مظالم،اووربلنگ و لوڈشیڈنگ سے نجات دلائیں۔