امریکیوں کو جانتا ہوں ،ڈالر ایسے نہیں دینگے ،مزید غلامی کرائیں گے،عمران خان

285

کوہاٹ( خبرایجنسیاں)تحریک انصاف کے چیئرمین و سابق وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ امریکیوں کو جانتا ہوں یہ ڈالر ایسے نہیں دیں گے، مزید غلامی کرائیں گے، امپورٹڈحکومت پر اس وقت خوف طاری ہے، جو چہرے ہم پر مسلط کیے گئے اورجنہوں نے مسلط کیے ان کوپیغام ہے یہ آزاد ملک ہے، یہ کہیں گے ڈالر دو ورنہ عمران خان پھر واپس آجائے گا۔کوہاٹ میں جلسے سے خطاب میں ان کا کہنا تھاکہ لوٹوں کے خلاف فیصلے پر عدالت عظمیٰ کا شکریہ ادا کرتے ہیں، عدالت عظمیٰ نے پاکستان کی اخلاقیات کو گرنے سے بچایا، ہم چوروں کو ملک پر مسلط نہیں ہونے دیں گے، جو لوگ ووٹ بیچتے ہیں اپنے لوگوں، آئین اور جمہوریت سے غداری کرتے ہیں۔پی ٹی آئی چیئرمین نے کہا کہ ڈالرکے مقابلے میں روپیہ گر رہا ہے، پیٹرول اور ڈیزل کی قیمتیں بڑھنے لگی ہیں، امپورٹڈ حکومت خوف زدہ ہے، جدھر سے ان کی حکومت بنی ان کا حکم ہے کہ پیٹرول اور ڈیزل مہنگا کیا جائے،شہباز شریف کو وزیراعظم بننے کا بڑا شوق تھا، اس نے بڑی دیر سے اچکن سلوائی ہوئی تھی، آج ن لیگ کے مقابلے میں واقعی زرداری بھاری ہے، ساری گالیاں ن لیگ کو پڑرہی ہیں اور زرداری مزے کر رہا ہے۔عمران خان کا کہناتھاکہ ہم نے روس سے تیل خریدنے کافیصلہ کیا تھا، روس سے تیل لینے سے عوام کو 30 فیصد پیٹرول سستا ملناتھا،شہبازشریف، زرداری اور فضل الرحمن تینوں نے زورلگاکرہماری حکومت گرائی، زرداری وفاقی حکومت میں بیٹھا ہے اور سندھ پر بھی قبضہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ آج جو حکومت ہے یہ ہمیں کہتے رہے آپ نا اہل ہیں، ہم تجربہ کار ہیں، کدھر گیا وہ تجربہ؟ ملک کی معیشت تباہ کردی گئی ہے، سب نے کہا شہباز شریف تجربہ کار ہے صبح 7 بجے اٹھ جاتا ہے، شہباز شریف کدھر گیا وہ تجربہ؟ یہ اللہ کا کرم ہے کہ یہ اب چھپتے پھر رہے ہیں۔سابق وزیراعظم نے کہاکہ حمزہ شریف نے بھی بڑی دیر سے اچکن سلوائی، اب اچکن کو بھی رکھو اور پنجاب میں مرغی کی قیمتیں بھی نیچے آجائیں گی۔ان کے بقول جب انہوں نے ہماری حکومت گرائی سب سے زیادہ ڈالر ملک میں آرہا تھا، پاکستان میں سرمایہ کاری کے لیے بیرون ملک پاکستانیوں نے پروگرام بنائے، ہم نے سب سے زیادہ برآمدات کیں، انڈسٹری کو اوپر اٹھایا، پاکستان میں 50 سال بعد ہم نے ڈیم بنانا شروع کیے تھے، ہم نے سستی سڑکیں بنا کر ایک ہزار ارب روپے بچائے۔عمران خان کا کہنا تھاکہ میں آپ کو سیاست نہیں تبلیغ سکھا رہا ہوں، میں آپ کو تبلیغ کرکے دین سیکھا رہا ہوں،اللہ نے ہمیں یہ اجازت ہی نہیں دی کہ آپ نیوٹرل ہوجاؤ، بیچ کا کوئی راستہ نہیں۔ان کا کہنا تھاکہ عدالت عظمیٰسے ایک اور درخواست ہے کہ شریف فیملی کے کرپشن کیسز آپ سنیں کیونکہ ایف آئی اے کو تباہ کردیا ہے، ایف آئی اے کو 2 افسران کوہارٹ اٹیک ہوا اس پر بھی عدالت عظمیٰ ایکشن لے، انہوں نے 2008ء سے2018ء تک جو کرپشن کی ان پر اربوں روپے کے کیسز ہیں، ہمیں اور کسی پر اعتماد نہیں رہا، آپ شریف خاندان کے کرپشن کے کیسز سنیں۔سابق وزیراعظم نے کہا کہ ہم صرف ایک چیز چاہتے ہیں الیکشن کراؤ، عوام کو فیصلہ کرنے دو قیادت کون کرے گا، امریکا سے امپورٹڈ حکومت کو نہیں مانتے، 40 ارب روپے کا ڈاکا پڑاہے اس کیس کو کیسے چھوڑا جاسکتا ہے؟ ان کا کہنا تھاکہ جب یہ باہر جاتے ہیں تو ان کی کانپیں ٹانگتی ہیں، یہ امریکیوں کی آنکھ میں آنکھ ڈال کربات نہیں کرسکتے، یہ ایبسلوٹلی ناٹ نہیں کہہ سکتے، یہ چھانگے مانگے والا پاکستان نہیں رہا، ایک طرف پی پی اور دوسری طرف ن لیگ ووٹوں کی خریداری کرتی تھی، نہ ہم کسی لوٹے کو خریدتے ہیں، نہ ہم کسی کو معاف کرتے ہیں، یہ نیا پاکستان ہے، یہاں اخلاقیات کو فروغ دینا ہے۔عمران خان نے مزید کہا کہ جلسہ گاہ میں پوری طرح لائٹیں نہیں اور تعداد ٹھیک انداز میں پتا نہ چلنے کا مجھے افسوس ہے، دن میں ہوتا تو یہ جلسہ کوہاٹ کی تاریخ کا سب سے بڑا جلسہ ہے۔