حکومت مدت پوری کریگی،ہرفیصلے میں ساتھ دینگے،اتحادیوں کی یقین دہانی

167

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) وزیراعظم شہباز شریف کی زیر صدارت اتحادی جماعتوں کے اجلاس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ حکومت اگست 2023 ء تک اپنی آئینی مدت پوری کرے گی۔اجلاس میں ملکی سیاسی و معاشی صورتحال پر غور کیا گیا اور اہم فیصلے کیے گئے۔ اجلاس میں مولانا فضل الرحمن، آصف زرداری، خالد مقبول صدیقی، وفاقی وزرا اعظم نذیرتارڑ، خواجہ آصف، سعد رفیق اورمریم اورنگزیب بھی شریک ہوئے۔ نجی ٹی وی جیونیوز کوذرائع نے بتایا کہ آئینی مدت پوری کرنے کا فیصلہ تباہ حال معیشت کی بحالی کے لیے کیا گیا ہے۔اس کے علاوہ اجلاس میں آرٹیکل 63 اے کی تشریح سے متعلق عدالت عظمیٰ کے فیصلے پر بھی غور کیا گیا۔ ذرائع کے مطابق اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ عدالت عظمیٰ کے فیصلے پر فوری قانونی رائے لی جائے اور آئندہ الیکشن کے لیے انتخابی اصلاحات جلد مکمل کی جائیں۔ ذرائع کے مطابق اتحادیوں نے وزیراعظم کو یقین دہانی کرائی کہ حکومت کے ساتھ ہیں، ہر فیصلے میں ساتھ ہوں گے۔اتحادیوں نے وزیراعظم کو مشورہ دیا کہ معیشت کیاستحکام کے لیے فوری اقدامات کیے جائیں۔ذرائع کے مطابق اتحادیوں نے مشورہ دیا کہ روپے کی قدر میں استحکام کے لیے معاشی ٹیم فوری اقدامات کرے، معیشت کی بہتری کے لیے آئی ایم ایف پروگرام کو فوری حتمی شکل دی جائے۔ اتحادی رہنماؤں نے معیشت کی بہتری کے لیے حکومت کے سخت فیصلوں پرساتھ دینے کی یقین دہانی بھی کرائی۔اجلاس میں گفتگو کی گئی کہ عدالت عظمیٰ کے فیصلے کے بعد پنجاب میں ممکنہ سیاسی بحران سے نمٹنے کو تیار ہیں۔