سندھ ہائیکورٹ نے عبدالحفیظ شیخ کی حفاظتی ضمانت منظور کرلی

192

کراچی:سابق وزیر خزانہ ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ نے نیب گرفتاری سے بچنے کے لئے ٹرانزٹ حفاظتی ضمانت کے لئے سندھ ہائی کورٹ پہنچ گئے۔

عدالت نے ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ کی ایک لاکھ روپے کے ضمانتی مچلکوں کے عوض 10روز کے لئے حفاظتی ضمانت منظور کر لی۔

عبدالحفیظ شیخ کے بھائی کی جانب سے سندھ ہائی کورٹ میں درخواست دائر کی گئی کہ ان کے بھائی کے خلاف احتساب عدالت میں ریفرنس زیرسماعت ہے جہاں پر انہوں نے پیش ہوناہے لیکن نیب سے گرفتاری کاخدشہ ہے لہذا ٹرانزٹ حفاظتی ضمانت منظور کی جائے۔

سندھ ہائی کورٹ نے عبدالحفیظ شیخ کی10روزہ حفاظتی ضمانت منظور کرتے ہوئے نیب کو ا ن کی گرفتاری سے روک دیا ہے۔ عدالت نے ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ کو ایک لاکھ روپے کے مچلکے جمع کروانے کا حکم دیا ہے۔

نیب ریفرنس کے مطابق ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ نے سافٹ وئیر پروگرامنگ کے لئے ایک نجی کمپنی کو فائدہ دیا تھا جس سے قومی خزانہ کو ایک کروڑ 10لاکھ ڈالرز سے زائد کا نقصان پہنچا تھا ۔

اس حوالہ سے احتساب عدالت میں ان کے خلاف نیب ریفرنس زیر سماعت ہے اوروہ ان الزامات کاسامنا کرنا چاہتے ہیں لہذا انہیں احتساب عدالت میں پیش ہونے کے لئے مہلت دی جائے جس پر عدالت نے ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ کی 10روز کے لئے حفاظتی ضمانت منظور کر لی ہے۔