حکومت ڈالر کی بے ہنگم پرواز روکنے کیلئے ہنگامی اقدامات اٹھائے،عدیل بھٹہ

133

لاہور: صنعتکار رہنماچیئرمین ٹائون شپ انڈسٹریز ایسوسی ایشن لاہور چوہدری محمد عدیل بھٹہ نے روپے کی قدر میں کمی اورڈالر کی تیزی سے بڑھتی ہوئی قیمت پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ڈالر ملکی تاریخ کی بلند ترین سطح193سے تجاوز کرچکا ہے ، ڈالر کی قیمت میں اضافہ سے غیرملکی قرضوں میں اربوں روپے کا اضافہ ہورہا ہے

اور ملکی معیشت بری طرح متاثر ہوگی کیونکہ انڈسٹریز میں استعمال ہونے والا درآمدی خام مال مہنگا ہوجائے گا جس سے صنعتی شعبہ کی پیداواری لاگت بڑھے گی اشیاء مہنگی ہونگی اور ملک میں جاری مہنگائی میں ہوشربا اضافہ ہوگا ۔ڈالر کی قیمت میں مسلسل اضافہ سے کاروباری لاگت بڑھ رہی ہے

اس لیے اسٹیٹ بینک آف پاکستان روپے کی قیمت میں استحکام اور ڈالر کی بڑھتی ہوئی قیمت کو کنٹرول کرنے کیلئے موثر حکمت عملی اختیار کرے ۔ا ن خیالات کا اظہار انہوں نے ٹائون شپ انڈسٹریز ایسوسی ایشن کے سینئر وائس چیئرمین میاں شہریار علی،سید عباس احسن وائس چیئرمین کے ہمراہ صنعتکاروں کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

چوہدری عدیل بھٹہ نے کہا کہ ایک ماہ کے دوران روپے کی قدر میں چھ فیصد سے زائد کمی ہوئی ہے۔انہوںنے پاکستان بڑی مقدار میں تیل ، کھاد، اشیائے خوردونوش، مشینری ،خام لوھا، صنعتی خام مال درآمد کرتا ہے اس لیے ڈالر کی قیمت میں اضافہ کاروباری شعبہ کیلئے شدید مشکلات پیدا کررہا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ معیشت پہلے ہی بہت سے اندرونی و بیرونی چیلنجز سے دوچار ہے روپے کی قدر میں کمی سے تجارتی و معاشی سرگرمیوں میں مزید کمی آئے گی جس کے اثرات سے حکومتی ٹیکسز اور ریونیو میں کمی آئے گی اس لیے حکومت روپے کی قدر میں اضافہ کیلئے فوری اقدامات اٹھائے اور حکومت ڈالر کی بے ہنگم پرواز روکنے کیلئے ہنگامی اقدامات اٹھائے ۔