قومی اسمبلی: حکومتی ارکان اپنے ہی وزیر کے خلاف بول اٹھے

104

اسلام آباد (آن لائن)قومی اسمبلی کا اجلاس ،ایوان میں دلچسپ صورت حال رہی ، حکومتی اراکین اپنے ہی وزیر کے خلاف بول اٹھے،کورم کی نشاندہی کرنے والوں کے مائیک بند کر دیے گئے ، جی ڈی اے کی رکن قومی اسمبلی ڈاکٹر فہمیدہ مرزا ایوان سے احتجاجاً واک آوٹ کرگئیں جبکہ صرف حکومتی8 اراکین ایوان کی کارروائی میں بیٹھے رہے ۔تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز ڈپٹی اسپیکر قومی اسمبلی زاہد اکرم دورانی کی زیر صدارت اجلاس میں جی ڈی اے کی رکن قومی اسمبلی ڈاکٹر فہمیدہ مرزا نے بار بار کورم کی نشاندہی کرنے کے لیے بٹن دبایا مگر اسپیکر نے مائیک نہ دیا جبکہ ڈاکٹر فہمیدہ مرزا مائیک نہ دینے پر واک آوٹ کرگئیں ،ایم کیو ایم بھی بولنے کا موقع نہ دینے پر واک آوٹ کرگئی ۔اس موقع پر قومی اسمبلی کا اجلاس صرف 8 ارکان کی موجودگی میں جاری رہاجبکہ اپوزیشن کا کوئی بھی رکن ایوان میں موجود نہیں تھا۔اس موقع ہر مسلم لیگی ایم این اے قیصر احمد شیخ نے وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل کو خوشامدی اور چیلہ قرار دے دیا ۔قیصر شیخ نے کہا کہ وزیر خزانہ خوشامدی اور چیلے ہیں،ناپختہ شخص کو وزیر خزانہ لگایا گیا ہے۔