گرمی میں اضافہ، برف مہنگی فروخت ہونے لگی

612

سکھر: گرمی میں اضافہ کے ساتھ ہی سکھر اور اسکے گرد نواح میں برف کی مانگ بڑھ گئی ، برف کی قیمت پندرہ روپے سے بیس روپے کلو تک پہنچ گئی ، برف غریبوں کے لئے شدید گرمی میں ایک بہت بڑا تحفہ ہے۔

تفصیلات کے مطابق رمضان المبارک میں افطاری کی تیاریوں اور گرمی کی شدت میں اضافہ کے ساتھ ملک بھر کی طرح سندھ کے تیسرے بڑے شہر سکھر میں بھی برف کی فروخت میں تیزی سے اضافہ ہونا شروع ہوگیا ہے۔ متوسط اور غریب طبقہ کے افراد جن کے پاس فریج یا فریزر نہیں ہیں وہ برف خرید کر گرمی میں ٹھنڈا پانی حاصل کرتے ہیں۔

شہر میں برف کے کارخانے دن رات برف بنانے میں مصروف ہیں اور گاڑیوں کے ذریعے مختلف علاقوں میں برف پہنچائی جاتی ہے، موجودہ ملکی حالات کے باعث کاروباری زندگی متاثر ہونے کی وجہ سے کئی شہریوں نے بھی چھوٹے ٹھیلے لگا کر برف فروخت کرنا شروع کر آمدنی بڑھانا شروع کر دی ہے برف فروخت کرنے والے گرمی کے موسم میں برف کو اپنے لئے نعمت سمجھتے ہیں۔

دکاندار وں کے مطابق گرمی کی شدت میں اضافہ اور افطاری کی تیاریوں کیساتھ ہی برف کی مانگ میں اضافہ ہو رہا ہے اور برف غریبوں کے لئے شدید گرمی میں ایک بہت بڑا تحفہ ہے بجلی کی لوڈ شیڈنگ کے باعث کارخانوں سے برف کم مل رہی ہے۔