ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل رپورٹ میں فنانشل کرپشن شامل نہیں،فواد چودھری

240

وفاقی وزیر اطلاعات فواد چودھری نے کہا ہے کہ ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل رپورٹ کے معاملے پر کابینہ میں بات چیت ہوئی ہے، فنانشل کرپشن نہیں، قانون کی حکمرانی کی وجہ سے سکور کو ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل نے نیچے کیا ہے، وفاقی کابینہ نے مردم شماری کے لیے 5 ارب روپے کی منظوری دے دی ہے، مردم شماری امسال دسمبر میں مکمل ہو گی، اپریل،مئی میں نتائج آ جائیں گے۔

وفاقی کابینہ کے اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وفاقی وزیر اطلاعات نے کہا کہ جنوری میں الیکشن کمیشن نئی حلقہ بندیوں کا آغاز کر سکے گا، اگلا الیکشن نئی مردم شماری پر ہو گا،فواد چودھری نے کہاکہ کابینہ نے کرمنل لاکی منظوری دی ہے، ہرکرمنل کیس کا فیصلہ 9 ماہ کے اندر کرنا لازمی ہو گا، اگر نو ماہ سے زائد کیس جاری رہے گا تو جج چیف جسٹس کو وجوہات سے آگاہ کرے گا، اگر پراسیکیوٹر، جج کی غلطی ہوئی تو دونوں کے خلاف کارروائی ہو گی، پولیس کے بیل لینے کے اختیارات بڑھائے جارہے ہیں۔ ایس ایچ او کی تعلیم بی اے ہو گی، بی اے سے کم تعلیم والے کو ایس ایچ او نہیں لگایا جائے گا، پراسیکیوشن کا اختیاربھی بڑھایا جارہا ہے۔ پولیس نے چالان پہلے 14 دن کے اندر دینا ہوتا تھا، پولیس چالان کی مدت کو اب 40 دن کر دیا گیا ہے، چیک ڈِس اونر کیس میں ضمانت کو لازمی کر دیا گیا ہے،ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل رپورٹ سے متعلق بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس معاملے پر کابینہ میں بات چیت ہوئی ہے، ابھی پوری رپورٹ پبلش نہیں ہوئی، ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل کا مختلف کرائی ٹیئریا ہے، فنانشل کرپشن نہیں، قانون کی حکمرانی کی وجہ سے سکور کو ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل نے نیچے کیا ہے۔