سیدنا صدیق اکبر نے منکرین ختم نبوت کے خلاف علم جہاد بلند کیا،عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت

378

حضرت سیدنا صدیق اکبر ؓ نے اسلام کیلئے گراں قدر قربانیاں پیش کیں۔ آپ ؓ تحفظ ناموس رسالت و ختم نبوت کے پہلے عظیم مجاہد اول ہیں۔سیدنا ابو بکر ؓنے منکرین ختم نبوت کے خلاف اعلان جہاد کیا۔منکرین ختم نبوت کے خلاف آپؓ کے دور میں اجماع امت ہوا۔

ان خیالا ت کا اظہار عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے مرکزی رہنما مولانا عزیز الرحمن ثانی، مبلغ ختم نبوت لاہور مولانا عبدالنعیم، مولانا قاری علیم الدین شاکر، قاری جمیل الرحمن اختر، حافظ محمداشرف گجر، مولانا خالد محمود،قاری ظہورالحق، مولانا سعید وقار، مولانا محبوب الحسن طاہر نے لاہور کی مختلف مساجد میں خطبہ جمعہ میں کیا۔

ان کا کہنا تھا کہ سیدنا ابو بکرؓ کی زندگی روشن مینارہ ہے آپؓ کی تعلیمات امور سلطنت کیلئے مشعل راہ ہیں۔ ریاست مدینہ کی جو بنیاد رسول ؐ نے رکھی اس کی ترویج اشاعت سیدنا صدیق اکبرؓ نے فرمائی ہماری آنے والی نسلوں کو سیدنا صدیق اکبرؓ کی عظمت و شان و خدمات اسلام معلوم ہو سکے۔ سیدنا صدیق اکبر رضی اللہ عنہ حق وصداقت اور جرأت وبہادری کے پیکر ہیں،سیدنا صدیق اکبر نے ختم نبوت کا تحفظ کرتے ہوئے جھوٹے مدعی نبوت مسیلمہ کذاب کو عبرت کا نشان بنادیا،ختم نبوت کا تحفظ کرنے کیلئے آج بھی عاشقان رسول تن من دھن سب کچھ قربان کرنے کو تیار ہیں۔

علمائے کرام کا کہنا تھا کہ حکومت قادیانی فتنے کو ملک کے آئین کے تحت حکومت روکے۔ ملک سے نفرتوں،تعصب وعصبیت کا خاتمہ سیدنا صدیق اکبر رضی اللہ عنہ کی روشن تعلیمات پر عمل پیر ا ہوکر کیا جاسکتا ہے سیدنا صدیق اکبر ختم نبوت ﷺ کے منکروں کے خلاف علم جہاد بلند کرکے دین کا تحفظ کیا۔