پی پی بدین کا اجلاس،جیالوں نے پارٹی وزرا پر الزامات لگادئیے

144

بدین(نمائندہ جسارت) پیپلزپارٹی بدین کے 27فروری کو پارٹی کے لانگ مارچ کے حوالے سے منعقدہ اجلا س میں جیالوں نے پارٹی وزراءاور مشیروںپر نظر انداز کرنے کے الزامات لگادےے۔ تفصیلات کے مطابق پیپلزپارٹی کی جانب سے 24 جنوری کو ٹریکٹر ٹرالی مارچ اور 27 فروری کو لانگ مارچ کے سلسلے میں حیدرآباد ڈویژن کے صدر علی نواز شاہ رضوی کی صدارت
میں پیپلزپارٹی ضلع بدین کا لواری شریف پیلس میں ہونے والے جنرل باڈی اجلاس میں ڈویژنل صدر کے علاوہ ڈویژنل سیکرٹری دوست علی جیسر، سیکرٹری اطلاعات آفتاب خانزادہ، ضلعی صدر حاجی رمضان چانڈیو سمیت عہدیدران اور کارکنوں نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔اجلاس میں 27 فروری کو نیازی حکومت کے خلاف پیپلز پارٹی کی جانب سے کراچی سے اسلام آباد کے لیے روانہ ہونے والے لانگ مارچ میں بھرپور عوامی قوت کے ساتھ شرکت کا فیصلہ کیا گیا۔ اس موقع پر کارکنوں نے پیپلزپارٹی کے وزیروں ،مشیروں اور اراکین اسمبلی پر نظرانداز کرنے کا الزام عاید کرتے ہوئے کہا کہ پرانے اور مخلص کارکنوں کو ملازمتوں ترقیاتی اسکیموں اور دیگر مراعات میں مسلسل نظرانداز کیا جا رہا ہے ،پارٹی پر نئے افراد قابض ہیں سرکاری دفاتر میں رشوت عام ہے عوام جائز کاموں کے لیے دربدر ہیں شکایت سننے والا کوئی نہیں جس کا نقصان پیپلزپارٹی کو ہی ہو رہا ہے۔ رہنماﺅں نے معاملے کودوسری جانب موڑتے ہوئے کہا کہ ہمیں اپنی پوری توجہ لانگ مارچ کی جانب مبذول کرنی چاہیے ، 27فروری کو بھرپور عوامی طاقت کے ذریعے لانگ مار چ میں شریک ہونگے۔