شہری ایف آئی اے کے نام سے جعلی میسج ڈاؤن لوڈ نہ کریں،اسد الرحمن

144

 

کراچی (اسٹاف رپورٹر) شہری سوشل میڈیا یا انٹر نیٹ پر ایف آئی اے کے حوالے سے بھیجے جانے والے پیغام یا ایپ کو ڈاؤن لوڈ کرنے سے گریز کریں، ہیکرز ایف آئی اے کے نام سے عوام کو جعلی میسج اور خطرناک ایپ سینڈ کر رہے ہیں۔ اس ایپ کو ڈاؤن لوڈ کر کے انسٹال کرنے سے ہیکرز صارفین کا موبائل کیمرہ ہیک کرنے کے ساتھ ساتھ موبائل میں موجودفون نمبرز، لوکیشن و دیگر ڈیٹا تک بھی رسائی حاصل کر سکتے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار سائبر سیکورٹی ایکسپرٹ محمد اسد الرحمن نے کیا۔تفصیلات کے مطابق ہیکرز ایف آئی اے کے نام سے عوام کو میسج کر رہے ہیں جس میں لکھا ہوتا ہے کہ’ پاکستان کے وفاقی تحقیقاتی ایجنسی کو آپ کے نیٹ ورک اور آلات پر کچھ مشتبہ سرگرمی ملی ہے۔ آپ کو متنبہ کیا جاتا ہے۔ آپ اس ایپلی کیشن میں اپنے نیٹ ورک کی تمام سرگرمیاں دیکھ سکتے ہیں۔ اس درخواست کے بارے میں اپنی معلومات کسی کے ساتھ شیئر نہ کریں‘۔اس جعلی میسج کے ساتھ ایک APKفائل یعنی موبائل ایپ بھی سینڈ کی جاتی ہے۔ اس ایپ کو ڈاؤن لوڈ کر کے جب انسٹال کیا جاتا ہے تو موبائل صارف کو معلوم ہوئے بغیر ہیکرز کیمرہ کو آن کر لیتے ہیں اس کے علاوہ موبائل میں موجود فون نمبر ز، لوکیشن، گیلری و دیگر ڈیٹا تک بھی رسائی حاصل کر لیتے ہیں۔ انہوں نے مزید بتا یاکہ تحقیق کے دوران دیکھا گیا کہ اس ایپ کے ذریعے موبائل صارف کے ڈیٹا کے علاوہ سوشل میڈیا اکاؤنٹس بھی ہیک کر لیے گئے۔