واقعہ سیالکوٹ کے ملزمان کیخلاف مقدمہ دہشت گردی عدالت میں چلایاجائیگا،وزیر اعلیٰ پنجاب

193

وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عُثمان بُزدار نے کہاہے کہ سیالکوٹ میں غیر ملکی شہری کوجلانے کا واقعہ انتہائی دلخراش اور قابل مذمت ہے اور اس دردناک واقعہ پر ہر پاکستانی افسردہ ہے۔ ذمہ دار عناصر انسان کہلانے کے حقدار نہیں- ملزمان عبرتناک سزا سے نہیں بچ پائیں گے۔

یہ خبر بھی پڑھیں: وزیر اعلیٰ عثمان بُزدارکوواقعہ سیالکوٹ کی ابتدائی رپورٹ پیش

انہوں نے کہاکہ انصاف ہر صورت ہوگا اور ہوتا ہوا نظر بھی آئے گا۔درندگی کامظاہرہ کرنے والے کسی رعایت کے مستحق نہیں۔ ملزمان کو قانون کے مطابق سخت ترین سزا دلائی جائے گی۔ انہوں نے کہاکہ اسلام امن اور آشتی کا دین ہے اوردین اسلام میں تشدد کی کوئی گنجائش نہیں ہے۔

وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کہاکہ سری لنکا کی حکومت اور عوام خصوصاً ہلاک شہری کے لواحقین سے دلی ہمدردی اور تعزیت کا اظہار کرتے ہیں۔ دکھ کی اس گھڑی میں غمزدہ خاندان کے ساتھ ہیں۔یقین دلاتے ہیں کہ انصاف کے تمام تقاضے پورے کئے جائیں گے اور انصاف ہوگا۔انہوں نے کہاکہ سری لنکا کے عوام اور سوگوار خاندان کے غم میں برابر کے شریک ہیں۔ افسوسناک واقعہ کی مذمت کیلئے میرے پاس الفاظ نہیں ہیں۔ بربریت کے اس واقعہ سے ہر پاکستانی کا سر شرم سے جھک گیا ہے،حکومت اس ضمن میں اپنی تمام تر ذمہ داریاں پوری کرے گی۔

انہوں نے کہاکہ ذمہ داروں کے خلاف بلاتاخیر قانونی کارروائی عمل میں لائی جارہی ہے-ملزمان کے خلاف مقدمہ انسداد دہشت گردی کی عدالت میں چلایا جائے گا۔ انہوں نے کہاکہ پاکستان ہر اُس شخص کا ہے جو یہاں بستا ہے ۔وطن عزیز میں رہنے والا ہر شخص پاکستانی ہے، چاہے اس کا تعلق کسی بھی مذہب،نسل یاطبقے سے ہو۔ شہریوں کی جان ومال کا تحفظ حکومت کی ذمہ داری ہے۔ آئندہ ایسے افسوسناک واقعات کے سدباب کیلئے مؤثر اقدامات کرنے کے لئے ہدایات جاری کردی ہیں ۔