ایم کیو ایم حیدرآباد کا بلدیاتی ترمیمی بل کیخلاف احتجاج

91

حیدرآباد (اسٹاف رپورٹر)متحدہ قومی موومنٹ حیدرآباد کے کارکنوں نے بلدیہ ملازمین سے اظہار یکجہتی اور سندھ میں نئے بلدیاتی ایکٹ کے خلاف اسٹیشن روڈ پر بلدیہ حیدرآباد کی مرکزی عمارت کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا جس میں شامل بری تعداد میں کارکنان حکومت کے خلاف نعرے لگاتے تھے۔مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے ایم کیو ایم کے ڈپٹی کنوینر کنور نوید جمیل نے کہا کہ سندھ کی متعصب حکومت بلدیہ کے ذریعے چلائے جانے والے اسکولوں، اسپتالوں اور دیگر اداروں کو اپنی تحویل میں لے رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ برسوںسے پیپلز پارٹی کی حکومت سندھ میں رہنے والوںکے خلاف زیادتی کررہی ہے لیکن کوئی ادارہ ہماری داد رسی کرنے کو تیار نہیں ہے۔ سندھ کے شہری علاقوں کے لاکھوں نوجوانوں کو بیروزگار کرنے کیلیے جعلی ڈومیسائل بنائے گئے۔ انہوں نے کہا کہ اگر ہمارے مسائل حل نہ ہوئے تو ہم اپنا صوبہ بھی الگ بنائیں گے۔انہوں نے کہا کہ وفاقی حکومت ہمیں انصاف دلائے، ایم کیو ایم نے فیصلہ کر لیا ہے کہ اب ظلم برداشت نہیں کریں گے۔