شاہین شاہ آفریدی لاہور قلندرز کا کپتان بننے پر رضامند

110
ڈھاکا: پاکستان کرکٹ ٹیم کے کھلاڑی بنگلادیش کے خلاف آج سے شروع ہونے والے دوسرے ٹیسٹ سے قبل پریکٹس میں مصروف ہیں

ڈھاکا(جسارت نیوز)شاہین شاہ آفریدی نے لاہور قلندرز کا کپتان بننے کے لیے رضامندی ظاہر کردی۔ان کا کہنا ہے کہ اگر پاکستان سپرلیگ میں کپتانی کی آفر ہوئی تو اسے قبول کرلوں گا، کپتانی ایک اعزاز ہے، لاہور قلندرز کے لیے ہر میچ میں پرفارمنس دینے کی ہمیشہ کوشش کرتا ہوں۔جمعہ کو ورچوئل پریس کانفرنس میں بائیں ہاتھ کے فاسٹ بولر نے کہا کہ ورک لوڈ اتنا بڑا ایشو نہیں۔ خود کو فٹ رکھنے کے لیے سخت ٹریننگ کرنے کا عادی ہوں۔ ٹرینر بھی اس چیز کا بہت خیال رکھتا ہے۔ کوویڈ میں ویسے ہی بہت محنت کرنا پڑرہی ہے۔ بنگلا دیش کے خلاف میچ میں آرام بھی کیا۔شاہین شاہ آفریدی نے واضح کیا کہ جارحانہ انداز سے بولنگ کرنا شوق ہے ۔ اگر انسان تگڑا ہو تو ہر قسم کی کنڈیشنز میں جارحانہ بولنگ کرسکتا ہے۔ تینوں فارمیٹ کی کرکٹ کے ہر لمحے کو انجوائے کررہا ہوں۔حسن علی کی موجودگی میں اچھی جوڑی بن گئی ہے ۔حسن علی کے ساتھ پارٹنر شپ میں بولنگ کرنا اچھا لگتا ہے ۔حسن زبردست فائٹر ہیں۔وسیم اکرم کا زیادہ وکٹوں کا ریکارڈ توڑنے کے سوال پر شاہین آفریدی کا موقف تھا کہ کوشش ہوتی ہے کہ جب کپتان بال دے تو سو فی صد پرفارم کروں۔اپنی پرفارمنس سے پاکستانی کی کامیابیوں میں کردار ادا کرنے کے لیے کوشاں رہتا ہوں۔ بابر اعظم ہر کھلاڑی سے سو فی صد کارکردگی لینے کے لیے اعتماد دیتا ہے۔ سپورٹ کرتا ہے۔ٹیسٹ کرکٹ میں وکٹ لینے کے لیے زیادہ محنت کرنا پڑتی ہے۔