نیب نے اسپیکر سندھ اسمبلی کو گرفتار کرلیا

137

اسلام آباد: نیب نے آغا سراج درانی کو سپریم کورٹ کے باہر سے گرفتار کرلیا ہے۔

آغا سراج درانی سپریم کورٹ میں ضمانت کی درخواست کے حوالے سے پیش ہوئے تھے، تاہم عدالت نے ان کی ضمانت کی درخواست مسترد کردی تھی۔

آغا سراج درانی اپنی درخواست مسترد ہونے کے بعد کئی گھنٹے سپریم کورٹ کے اندر ہی موجود رہے اور باہر نہیں نکلے، جب کہ نیب کی ٹیم آغا سراج درانی کو گرفتار کر نے کیلئے سپریم کورٹ کے باہر موجود رہی، تاہم جیسے ہی وہ عدالت سے باہر آئے انہیں نیب کے اہلکاروں نے فوری گرفتار کرلیا۔

نیب کی ٹیم اسپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی کو اپنے ساتھ لے گئی جہاں سے انہیں طبی معائنے کے لیے پمز اسپتال لے جایا جائے گا۔

قبل ازیں اسپیکر سندھ اسمبلی اور پیپلزپارٹی کے رہنما آغا سراج درانی کی ضمانت کی درخواست پر سپریم کورٹ میں کیس کی سماعت ہوئی، آغا سراج درانی ذاتی حیثیت سے عدالت میں پیش ہوئے۔

عدالت نے آغا سراج درانی کی ٹرائل کورٹ کے سامنے سرینڈر کرنے کی درخواست کی، جسٹس عمر عطا بندیال نے آغا سراج درانی کی ٹرائل کورٹ کے سامنے سرنڈر کرنے کی استدعا مسترد کرتے ہوئے ریمارکس دیئے کہ ٹرائل کورٹ کے سامنے سرنڈر کرنے کا حکم نہیں دے سکتے، ہم نے قانون کے مطابق چلنا ہے۔