ٹیکس نظام میں نئی تبدیلیوں کیخلاف تاجروں کا احتجاجی مظاہرہ

236

اسلام آباد:ٹیکس نظام میں نئی تبدیلیوں کیخلاف تاجروں نے وفاقی دارالحکومت میں احتجاجی مظاہرہ کیا،تاجرراہنماوں نے  ٹیکس ڈیوائس لگانے کے لئے آنے والے ایف بی آر نمائندوں سے تعاون نہ کرنے کا بھی اعلان کیا۔

تفصیلات کے مطابق آل پاکستان انجمن تاجران کی کال پر ملک کے مختلف حصوں سے آئے تاجروں نے وزیراعظم ہاوس کے سامنے جاکر احتجاجی دھرنا دینے کا اعلان کیا۔

 تاجروں کو روکنے کیلئے سیرینا چوک میں کنٹینر اور خاردار تاریں بچھائی گئی اور پولیس کی بھاری نفری تعینات کرکے تاجروں کے مارچ کو سیرینا سے پہلے ہی روک دیا گیا،تاجروں نے اسی چوک میں دھرنا دے دیا۔

 اس موقع پر احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے صدر آل پاکستان انجمن تاجران اجمل بلوچ نے کہا کہ پی ٹی آئی حکومت کی نئی ٹیکس پالیسیوں کو ہم نہیں مانتے۔ تاجر پہلے ہی کرونا کے ہاتھوں لٹے ہوئے ہیں، مزید ان پر ظلم نہ کیا جائے۔

تاجروں نے حتمی لائحہ عمل طے کرنے کیلئے 13جنوری کو لاہور میں آل پاکستان انجمن تاجران کنونشن بلانے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ کوئی ایف بی آر کا نمائندہ ڈیوائس لگانے آئے تو اس سے مزاحمت کی جائے گی۔