درگاہیں امن اور بھائی چارے کا گہوارہ رہی ہیں،ڈاکٹر خلیل ابوپوٹو

103

سکھر( نمائندہ جسارت)شاہ عبداللطیف یونیورسٹی خیرپور میں روضے دھنی چیئر کے زیرِ اہتمام اور سوریہ بادشاہ پینل آف ایمپلائز کے اشتراک سے حضرت شاہ مردان شاہ ثانی پیر صاحب پگارا کا 93ویں سالگرہ منائی گئی۔ وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر خلیل احمد ابوپوٹو تقریب کے مہمانِ خصوصی تھے۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے پروفیسر ڈاکٹر خلیل احمد ابوپوٹو نے کہا کہ حضرت پیر شاہ مردان شاہ ثانی پیر صاحب پگارا ایک کثیر الجہتی شخصیت کے مالک تھے۔ وہ ایک روحانی اور سیاسی رہنما بھی تھے۔ انہیں معاشرے، تاریخ ، فلسفے، علمِ جفر و دیگر علوم پر عبور حاصل تھا۔ وہ کتابوں اور علم سے محبت کرتے تھے جس کا ثبوت درگاہ پیر گوٹھ میں قائم لائبریری ہے جس میں سیکڑوں کتابیں موجود ہیں۔ ڈاکٹر خلیل ابوپوٹو نے کہا کہ درگاہیں امن اور بھائی چارے کا گہوارہ رہی ہیں۔ ہم محنت سے اپنی یونیورسٹی کو ترقی دے سکتے ہیں۔ اس موقع پر وائس چانسلر نے انچارج روضے دھنی چیئر کو ہدایت کی کہ چیئر کو فعال بنانے کے لیے بورڈ آف ڈائریکٹرز قائم کیا جائے۔ محمد حسن شیخ انچارج ڈائریکٹر روضے دھنی چیئر نے کہا کہ یہ چیئر 2005 میں قائم کی گئی۔ اس کے قیام سے اب تک 7 کتابیں شائع ہو چکی ہیں جس میں حر تحریک کی مشہور کتاب بھی شامل ہے۔ حر تحریک میں پیر صاحب پگارا کے حروں نے برطانوی سامراج کے خلاف جنگ کی۔ اس کے علاوہ 3 کتابیں اشاعت کے مرحلے میں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم حر تحریک، پیر صاحب پگارا پر تحقیق کرنے والے 2 ایم ایس اور ایم فل اور 1 پی ایچ ڈی ریسرچ اسکالرز کو تحقیقی مواد فراہم کررہے ہیں۔ اس کے علاوہ چیئر نے کافی تعداد میں لیکچر پروگرام، کانفرنسیں اور سیمینار بھی منعقد کروائے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پیر صاحب پگارا کی مذہبی، سماجی اور سیاسی خدمات مدتوں تک یاد رکھی جائیں گی۔ آخر میں وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر خلیل احمد ابوپوٹو نے پروفیسر ڈاکٹر تاج محمد لاشاری ڈین فیکلٹی آف سوشل سائنسز، مرید حسین ابوپوٹو رجسٹرار، نثار احمد نوناری ڈائریکٹر فنانس، قلندر بخش بوزدار صدر ایمپلائز ویلفیئر ایسوسی، محمد اسلم گھمرو جنرل سیکرٹری و دیگر نے سالگرہ کا کیک کاٹا۔