کاروبار کو نقصاد سے بچانے کیلیے یوٹیلیٹی مسائل پر قابو پایا جائے ، ناصر مگوں

157
ایف پی سی سی آئی کے صدر میاں ناصر حیات مگوںپائما کے چیئرمین ثاقب نسیم کو شیلڈ پیش کررہے ہیں

 

 

کراچی (اسٹاف رپورٹر)فیڈریشن آف پاکستان چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری ( ایف پی سی سی آئی ) کے صدر میاں ناصر حیات مگوں نے حکومت پر زور دیا ہے کہ گیس بحران پر قابو پانے اور صنعتوں کو بلاتعطل گیس فراہمی کے مؤثر اقدامات ساتھ ساتھ بجلی نرخوں میں کمی کی جائے ۔ حکومت نے بجلی اور گیس کے مسائل پر قابو نہ پایا تو تجارت اور صنعت کو خطیر نقصان پہنچے گا اور برآمدات متاثر ہوںگی جبکہ ریونیو میں بھی کمی آئے گی۔ یہ بات انہوں نے پاکستان یارن مرچنٹس ایسوسی ایشن ( پائما) کے مرکزی چیئرمین ثاقب نسیم کی قیادت میں وفد کے ایف پی سی سی آئی کے دورے کے موقع پر اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ اجلاس میں ایف پی سی سی آئی کے نائب صدر محمد حنیف لاکھانی، ایف پی سی سی آئی یارن کمیٹی کے کنوینر فرحان اشرفی، وفد کے ارکان خورشید اے شیخ، محمد عثمان، ایم ثاقب گڈلک، خرم بھارارا،دانش حنیف، وحید عمر، سہیل نثار، ایم نعمان الیاس، ایم اسلم موٹن، جاوید خانانی اور شعیب شریف شریک تھے۔ناصر حیات مگوں نے ملک کے اہم مسائل اجاگر کرتے ہوئے کہاکہ ملک بھر میں بجلی کی قلت اور گیس بحران نے صنعتوں سمیت عوام کو بری طرح متاثر کیا ہے۔ حکومت کو سنجیدگی سے ان بحرانوں پر قابو پانا چاہیے۔ انہوں نے وفاقی بجٹ میںعائد کردہ ڈیوٹیز اور ٹیکسوں کے بارے میں پائما ممبران کو درپیش مسائل پر کہا کہ وہ وزارت خزانہ، وزارت تجارت ، ٹیکسٹائل، ایف بی آر اور نیشنل ٹیرف کمیشن کے ساتھ قریبی روابط کے ذریعے پائماکی مشاورت سے یارن کے تاجروں کے مسائل حل کرنے میں بھرپور کردار ادا کریں گے۔