پی ڈی ایم بند گلی میں جا چکی ، منفی رویہ چھوڑ ے تو واپسی ممکن ہے ،ہمایوںاخترخان 

164

پاکستان تحریک انصاف کے سینئر مرکزی رہنما و سابق وفاقی وزیر ہمایوں اختر خان نے کہا ہے کہ مسلم لیگ (ن)نے اپنے دور میں کمرشل ڈیٹ میں 800فیصد اضافہ کیا ، گزشتہ دو دہائیوں میں کبھی بھی ڈھانچہ جاتی اصلاحات نہیں ہوئیں جبکہ موجودہ حکومت معیشت کو مضبوط بنیاد دینے کیلئے اس پر توجہ مرکوز کر رکھی ہے ،سابقہ ادوار میں معیشت کا ستیا ناس نہیں بلکہ سوا ستیا ناس کیا گیاجس کا خمیازہ پوری قوم بھگت رہی ہے ،پی ڈی ایم اپنی منفی سیاست کے بوجھ تلے دب گئی ، اس کے آفٹرشاکس بھی آئیں گے ۔ اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ عالمی ادارے کہہ چکے ہیں کہ موجودہ حکومت اصلاحات کے عمل کے ذریعے درست سمت میں گامزن ہے ، سابقہ دور میں 7سے8فیصد پر انتہائی مہنگے 14ارب ڈالر کے کمرشل قرضے لئے گئے ہم ان کے سکوک اور یورو بانڈز کے قرضے اتار رہے ہیں ۔ انہوںنے کہا کہ ہمارے پاس بھی راستہ تھا کہ ہم بھی مصنوعی اقدامات اٹھاتے اور پانچ سال حکومت کر کے گھر چلے جاتے لیکن وزیر اعظم عمران خان نے معیشت کی ترقی میں رکاوٹ بننے والے بنیادی مسائل کو جڑ سے ختم کرنے کا فیصلہ کیا ۔انہوںنے کہا کہ پی ڈی ایم بند گلی میں جا چکی، آج کل جتنے بھی اجلاس ہو رہے ہیں اس میں تحریک چلانے نہیںبلکہ فیس سیونگ کیلئے مشاورت ہوتی ہے، اگرپی ڈی ایم منفی رویہ چھوڑے تو اس کی بند گلی سے واپسی ممکن ہے۔