کاروبار میں سہولیات فراہم کرنا حکومت کی ترجیح ہے ، شوکت ترین

154
وزیرِ اعظم کے مشیر برائے خزانہ شوکت ترین سی ڈی سی میں پہلے پروفیشنل کلیئرنگ ممبرکے افتتاح کے موقع پر خطاب کررہے ہیں

کراچی(اسٹاف رپورٹر)وزیرِ اعظم کے مشیر برائے خزانہ شوکت ترین نے سینٹرل ڈپازٹری کمپنی (CDC)ہائوس میں پہلے پروفیشنل کلیئرنگ ممبر (PCM)کا باقاعدہ افتتاح کردیا۔ پی سی ایم کا افتتاح پاکستان کی کیپٹل مارکیٹ میں تاریخی کامیابی ہے۔ اس موقع پرمشیرِ خزانہ شوکت ترین نے کہاکہ کاروبار کو آسان بنانا اور کاروبار کرنے میں سہولیات فراہم کرنا ہماری حکومت کی اوّلین ترجیح ہے۔ پروفیشنل کلیئرنگ ممبر، سیکورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن آف پاکستان کاانتہائی اہم اور بروقت اقدام ہے اور سی ڈی سی نے بہت بہتر طریقے سے اسے رائج ہے۔ ہماری کیپٹل مارکیٹ کے لیے یہ بہت اہمیت کا حامل ہے کہ ہم ایسے نئے تصورات متعارف کرائیں جو ہماری مارکیٹ میں مزید شفافیت اور کارکردگی میں بہتری لائیں۔ سی ڈی سی نے کیپٹل مارکیٹ کی ترقی اور سرمایہ کاروں کو سہولت فراہم کرنے کی اپنی کوششوں سے سرمایہ کاروں، ریگولیٹر اور مارکیٹ کے تمام اسٹیک ہولڈرز کا اعتماد حاصل کیا ہے۔ ایس ای سی پی اور کیپٹل مارکیٹ کے بنیادی انفرااسٹرکچر کے اداروں کی جانب سے متعلقہ ریگولیٹری فریم ورک کے تعارف کے بعد پی سی ایم نظام کا کامیابی کے ساتھ نفاذ کیا گیا ہے ۔ سی ڈی سی، پی ایس ایکس، این سی سی پی ایل اور پاکستان کویت انوسٹمنٹ کمپنی نے پی سی ایم متعارف کرایا ہے جس کے نتیجے میں ای کلیئر سروسز لمیٹڈ (ESL)کا آغاز ہوا ہے۔اس پراجیکٹ میں سی ڈی سی کو بطور پراجیکٹ منیجر ذمہ داری سونپی گئی تھی۔ اس موقع پر ایس ای سی پی کے چیئرمین عامر خان نے کہاکہ پی سی ایم کے نفاذ سے کسٹڈی کے فنکشنز پی سی ایم کو منتقل ہونے سے کسٹڈی ڈیفالٹ کا خطرہ اور چھوٹے بروکرز کو بااختیار بناکر ریٹیل انوسٹر بیس کو بڑھانے جیسے 2دیرینہ مسائل حل ہوجائیں گے۔ اس موقع پر سی ڈی سی کے چیف ایگزیکٹو آفیسر بدیع الدین اکبر نے پریزینٹیشن دی اور پروفیشنل کلیئرنگ ممبر کے کام اور فوائد کے بارے میں بتاتے ہوئے کہاکہ یہ سلوشن پاکستان کی کیپٹل مارکیٹ میںسرمایہ کاروں کو مکمل طورپر نیا اور ڈیجیٹل تجربہ فراہم کرے گا ۔