بے روزگاری اورقرضوں سے پریشان میڈیا ورکر کی خودکشی

103

کراچی ( اسٹاف رپورٹر ) شہر قائد میں مہنگائی اور بے روزگاری سے تنگ ایک اور میڈیا ورکر نے اپنی زندگی کا خاتمہ کرلیا۔پولیس کے مطابق فیڈرل بی ایریا بلاک 16 میں رہائشی عمارت کے ایک فلیٹ میں فہیم احمد نامی شخص نے گلے میں پھندا لگاکر خودکشی کرلی۔پولیس کا کہنا ہے کہ متوفی 6 بچوں کا باپ تھا جس میں 5بیٹیاں اور ایک بیٹا شامل ہیں۔ فہیم 2 سال قبل نجی اخبار میں کام کرتا تھا ، وہاں سے نکالے جانے کے بعد سے بیروزگار تھا اور گزارے کے لیے رکشہ چلارہا تھا لیکن اسکے باوجود مالی حالات خراب تھے۔پولیس کے مطابق فہیم نے اپنی بیوی کو نیند کی گولیاں دیں جبکہ بچے واقعے کے وقت ٹیوشن میں تھے۔متوفی فہیم کے بہنوئی عمیر نے فون پر بتایاہے کہ فہیم نے 3 مہینے سے فلیٹ کا کرایہ بھی نہیں دیا تھا جبکہ اس نے بینک سے ایک لاکھ روپے کاقرض بھی لیا ہوا تھا جس کی قسطیں نہ ادا کر سکنے کے باعث پریشان رہتا تھا۔فہیم مغل نے بینک سے قرض لے کر رکشہ خریدا تھا تاہم روز بروز بڑھتی مہنگائی اور پیٹرول کی بڑھتی قیمتوں کے باعث وہ شدید پریشان تھا جس کا اظہار انہوں نے متعدد مرتبہ سوشل میڈیا پر پوسٹس میں بھی کیا،گزشتہ روز ہونے والی پیٹرولیم ڈیلرز کی ہڑتال کے باعث تنگ آکر فہیم مغل نے اپنے فلیٹ پر دوپٹے سے پھندا لگاکر زندگی کا خاتمہ کرلیا۔