سوات: خسرہ اور روبیلاسے بچاﺅ کی مہم کا آغاز

119

ملک بھرکی طرح سوات میں بھی خسرہ اور روبیلاسے بچا کی مہم کا آغاز کردیا گیا، 14لاکھ61ہزار034 بچوں کو حفاظتی ٹیکے لگائے جائیں گے، اس حوالے سے ڈی ایچ او سوات ڈاکٹر محمد سلیم خان نے تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ خسرہ و روبیلا کی موجودگی سے حاملہ ماں کو خطرہ رہتا ہے اور گھر میں معذور بچوں کے پیدا ہونے کے امکانات بڑھ جاتے ہیں، ایسے میں نو ماہ سے زائد اور 15 سال سے کم بچوں کو حفاظتی ٹیکے لگانا نہایت ضروری ہے، انسدادخسرہ و روبیلا مہم 27 نومبر تک جاری رہے گی، مہم کے دوران 9 ماہ سے 15 سال تک کے بچوں کو حفاظتی ٹیکے لگائے جارہے ہیں،

ٹیکے لگانے کے لئے ضلعی محکمہ صحت اور انتظامیہ کی جانب سے خصوصی انتظامات کئے گئے ہیں۔ ضلع بھر میں مہم کے دوران 1461034 بچوں کو حفاظتی ٹیکے لگائے جائیں گے جس کے لئے اسکولوں اور کمیونٹی سطح پر انتظامات کرتے ہوئے محکمہ صحت کی جانب سے 804 ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں، اسکولوں میں 4لاکھ57ہزار208 اور کمیونٹی سطح پر 10لاکھ3ہزار826 بچوں کو ٹیکے لگائے جائیں گے، گورنمنٹ ہائی سکول شگئی سے مہم کا آغاز کرتے ہوئے ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر سوات ڈاکٹر سلیم خان کا کہنا تھا کہ خسرہ و روبیلا دونوں ہی خطرناک موذی امراض ہیں جسکی روک تھام کے لئے ٹیکے لگائے جارہے ہیں.