خیبرپختون خوا کی تاریخ کی سب سے بڑی آئس کھیپ پکڑی گئی

200

پولیس نے صوبے کی تاریخ کی سب سے بڑی آئس کھیپ پکڑ کر افغان سرغنہ سمیت 5 ملزمان کو گرفتار کرلیا۔

کیپٹل سٹی پولیس پشاور کے مطابق خیبرپختون خوا پولیس نے آئس کے خلاف تاریخ کی سب سے بڑی کارروائی میں تقریبا 80کلو گرام آئس برآمد کرکے بین الاقوامی سطح پر آئس کا دھندہ کرنے والا گروہ پکڑ لیا، کارروائی میں افغانستان سے تعلق رکھنے والے سرغنہ سمیت 5 خطرناک اسمگلرز گرفتار کرلئے گئے۔پولیس حکام کے مطابق گرفتار ملزمان میں اسحاق، نعمت اللہ، افضل احمد عرف حاجی ملا، محمد عاکف اور محمد شان شامل ہیں.

2 ملزمان کا تعلق ہمسایہ ملک افغانستان جب کہ 3 ملزمان کوئٹہ بلوچستان کے رہائشی ہیں۔سی سی پی او عباس احسن نے بتایا کہ ملزمان کے قبضہ سے مجموعی طور پر 80کلو گرام آئس، اور اس کی اسمگلنگ میں استعمال ہونے والی دو عدد کاروں سمیت ڈیجیٹل اسکیلز اور دیگر اشیا بھی برآمد ہوئیں، قبضے میں لی گئی آئس کی مالیت 10 کروڑ روپے سے زائد بنتی ہے۔ ملزمان نے حیات آباد کے فیز II میں مکان کرائے پر حاصل کیا تھا.

اور وہ آئس افغانستان سے اسمگل کرنے کے بعد حیات آباد والے گھر میں پیک کرتے تھے، اور پیکنگ کے بعد آئس اندرون ملک سمیت ملک سے باہر بھی اسمگل کی جاتی تھی۔سی سی پی او عباس احسن کا کہنا تھا کہ حالیہ کارروائی سب سے اہم اور سب سے بڑی کامیابی ہے، منشیات اور آئس کی روک تھام کے لئے ٹھوس اقدامات اٹھائے جا رہے ہیں۔ قلیل عرصہ میں متعدد آئس اور ہیروئن فیکٹریاں سیل گئی ہیں، نیٹ ٹیم کی کارکردگی لائق تحسین ہے۔