پاکستان نے تاریخ رقم کردی،ٹی 20 ورلڈ کپ میں بھارت کو 10 وکٹوں سے عبرت ناک شکست

386
ابوظبی: بھارت سے ٹی ٹوئنٹی میچ جیتنے کے بعد قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان بابر اعظم دستانے اتارتے ہوئے جبکہ محمد رضوان رب کا شکر ادا کررہے ہیں،دوسری جانب شاہین شاہ آفریدی وکٹ لینے پر خوشی کا اظہارکررہے ہیں

دبئی/کراچی/لاہور/اسلام آباد/کوئٹہ / پشاور(خصوصی رپورٹ)آئی سی سی مینز ٹی ٹوئنٹی ورلڈکپ میں پاکستان نے بھارت کو یکطرفہ مقابلے کے بعد 10وکٹوں سے شکست دے دی۔ قومی ٹیم کرکٹ ورلڈکپ مقابلوں میں پہلی بار بھارت کو ہرانے میں کامیاب ہوئی۔3وکٹیں لینے والے شاہین شاہ آفریدی میچ کے بہترین کھلاڑی قرار پائے۔دبئی میں کھیلے گئے ٹی 20ورلڈ کپ کے اہم میچ میں پاکستان نے ٹاس جیت کر پہلے بھارت کو بیٹنگ کی دعوت دی۔بھارت نے اننگز کا آغاز کیا تو روہت شرما کھاتا کھولے بغیر پہلی گیند پر پویلین لوٹ گئے۔اسکور ابھی 6تک پہنچا ہی تھا کہ دوسرے اوپنر لوکیش راہل بھی شاہین کی گیند نہ سمجھ سکے اور کلین بولڈ ہو گئے۔2 وکٹیں گرنے کے بعد ویرات کوہلی کا ساتھ دینے سوریا کمار یادیو آئے اور دونوں تیسری وکٹ کے لیے 25رنز جوڑ کر اسکور کو 31 تک پہنچایا۔اس سے قبل کہ یہ شراکت خطرناک ثابت ہوتی، پاکستان نے چھٹے اوور میں حسن علی کو بالنگ پر متعارف کرایا جنہوں نے 11رنز بنانے والے سوریا کمار یادیو کو چلتا کردیا، محمد رضوان نے شاندار کیچ لے کر ٹی20 کرکٹ میں کیچوں کی سنچری مکمل کر لی۔محمد حفیظ بالنگ کے لیے آئے تو پاکستان نے کیچ کی اپیل مسترد ہونے پر ریشابھ پنت کے خلاف ریویو لیا لیکن فیلڈ امپائر کا فیصلہ درست ثابت ہوا اور پاکستان کا ریویو ضائع ہوگیا۔ اننگز کے12ویں اوور میں ریشابھ پنٹ نے جارحانہ انداز اپنایا اور حسن علی کو لگاتار 2 چھکے لگانے سمیت اوور میں 15 رنز بنائے لیکن اگلے ہی اوور میں شاداب خان کی گیند پر چھکا لگنے کی کوشش میں وہ اونچا شاٹ کھیل بیٹھے اور بالر نے اپنی ہی گیند پر کیچ لینے میں کوئی غلطی نہ کی۔بھارت کے وکٹ کیپر بلے باز نے آؤٹ ہونے سے قبل 39رنز کی اننگز کھیلی جبکہ دوسرے اینڈ سے کپتان ویرات کوہلی نے ذمے دارانہ بیٹنگ کا سلسلہ جاری رکھتے ہوئے نصف سنچری مکمل کر لی۔رویندرا جدیجا نے 13رنز کی اننگز کھیلی لیکن حسن علی کو چھکا لگانے کی کوشش میں متبادل کھلاڑی کو کیچ دے بیٹھے۔شاہین شاہ آفریدی نے عمدہ بالنگ کا سلسلہ جاری رکھا اور شاہین شاہ آفریدی نے بھارتی کپتان کوہلی کی اننگز کا خاتمہ کردیا، کوہلی نے 49گیندوں پر 57رنز بنائے۔اپنے اسپیل کی آخری گیند پر شاہین نے نوبال کردی اور فری ہٹ پر پانڈیا نے ایک رن لیا اور انہیں رن آٹ کرنے کے لیے شاہین کی جانب سے کی گئی تھرو پر چوکا ہو گیا اور یوں انہوں نے اپنے اسپیل کی آخری گیند پر 10رنز دے دیے۔اننگز کے آخری اوور میں حارث رؤف نے پانڈیا کو پویلین لوٹا دیا اور بھارت کی ٹیم ساتویں وکٹ سے محروم ہو گئی۔بھارت نے مقررہ اوورز میں 7 وکٹوں کے نقصان پر 151رنزپر محدود ہوگئی اور پاکستان کو فتح کے لیے 152رنز ہدف دیا ہے۔ پاکستان کی جانب سے شاہین 3وکٹوں کے ساتھ سب سے کامیاب بالر رہے جبکہ حسن علی نے دو اور شاداب اور حارث نے ایک، ایک وکٹ لی۔ پاکستان نے اننگز کا آغاز کیا تو محمد رضوان نے بھوونیشور کمار کو چوکا اور چھکا لگا کر ان کا استقبال کیا۔ اس کے بعد فاسٹ بالرز کے خلاف قومی بلے بازوں نے باآسانی رنز کیے لیکن اسپنرز کے خلاف وہ جدوجہد کرتے نظر آئے۔بابراعظم کو ابتدا میں رنز بنانے میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑا لیکن پھر انہوں نے رویندرا جدیجا کو چھکا اور ورن چکراورتھی کو چوکا لگا کر جارحانہ انداز اختیار کیا۔اننگز کے 13ویں اوور میں محمد رضوان اور بابر دونوں نے ورن کو چھکے لگا کر پاکستان کی سنچری مکمل کرائی جبکہ قومی ٹیم کے کپتان نے اپنی نصف سنچری بھی مکمل کرلی۔ بابر کے بعد رضوان نے بھی اپنی نصف سنچری مکمل کر لی اور بہترین بیٹنگ کرتے ہوئے ہدف کی جانب پیش قدمی جاری رکھتے ہوئے اپنی ٹیم کو کامیابی سے ہمکنارکیا۔کپتان بابر اعظم اور محمد رضوان نے گراؤنڈ کے چاروں اطراف دلکش اسٹروک کھیلے اور 152 رنز کی شاندار شراکت قائم کی اور بھارتی بولرز کو وکٹ لینے کا موقع نہ دیا۔محمد رضوان نے ناقابل شکست 79 رنز بنائے جبکہ بابر اعظم نے 68 رنز کی اننگز کھیلی اور ناٹ آؤٹ رہے۔دوسری جانب بھارت کے کپتان ویرات کوہلی نے کہا کہ ٹاس جیتنے کی صورت میں وہ بھی پہلے بالنگ ہی کرتے، پاکستان نے آج ہمیں آؤٹ کلاس کردیا۔یاد رہے کہ پاکستان اور بھارت کے درمیان 8 ٹی 20مقابلے ہوئے ہیں جن میں قومی ٹیم کو صرف ایک مرتبہ فتح حاصل ہوئی تاہم اگر ٹی20ورلڈکپ کی بات کی جائے تو دونوں حریف 5مرتبہ آمنے سامنے آئے ہیں اور اس میں پانچوں مرتبہ فتح بھارت کے حصے میں آئی ہے۔ بھارت کے خلاف تاریخی فتح پر کراچی، لاہور، گوجرانوالہ، کوئٹہ، پشاور سمیت مختلف شہروں میں عوام سڑکوں پر نکل آئے۔ملک کے مختلف شہروں میں تاریخی فتح پر ہوائی فائرنگ بھی کی گئی۔وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں سرد موسم اور بارش کے باوجود شائقین خوشی منانے سڑکوں پرآگئے۔کراچی میں پاکستان کی جیت کی خوشی میں آتش بازی کا شاندار مظاہرہ کیا گیا۔ہر طرف ملی نغموں کی گونج سنائی دیتی رہی۔ سوشل میڈیا پر بھی شائقین نے بھارت کے خلاف خوب بھڑاس نکالی ۔ادھر صدر مملکت عارف علوی، وزیراعظم عمران خان اور آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سمیت سیاسی ومذہبی رہنماؤں نے بھارت کو شکست دینے پر قومی ٹیم کو مبارک باد دی ہے۔صدر مملکت عارف علوی نے ٹویٹر پر قومی ٹیم کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ شاباش گرین شرٹس، مکمل صفایا کیا، 10 وکٹوں سے میچ جیت لیا، ہمیں آپ پر فخر ہے، ایک اچھا میچ تھا مزا آگیا، پاکستانیوں آپ سب کو مبارک ہو۔وزیراعظم عمران خان نے بھی سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر میچ دیکھتے ہوئے تصویر شیئر کی اور قومی ٹیم کو مبارک باد دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان ٹیم کو مبارکباد اور بابر اعظم کو جنہوں نے ٹیم کو فرنٹ سے لیڈ کیا، رضوان اور شاہین آفریدی نے شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کیا، پوری قوم کو آپ پر فخر ہے۔آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے پاکستان کرکٹ ٹیم کو شاندار کامیابی پر انہیں مبارک باد پیش کی ہے اور کہا ہے کہ پاکستان کرکٹ ٹیم ہمارے لیے باعث فخر ہے۔صدر ن لیگ اور قائد حزب اختلاف شہباز شریف نے کہا ہے کہ پاکستانی کرکٹ ٹیم نے عمدہ کارکردگی سے بھارت کو شکست دی، ان شااللہ پاکستانی کرکٹ ٹیم ورلڈ کپ بھی جیتے گی، آج ثابت ہوا کہ لگن سے کھیلیں گے تو کامیاب ہوں گئے، آئندہ میچز کے لیے گرین شرٹس، گڈ لک، پاکستانی کرکٹ ٹیم اور عوام کو بہت بہت مبارک باد۔پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول زرداری نے بھی پاکستان کی بھارت کیخلاف جیت پر مبارکباد پیش کی۔