قوم کو خود داری کا درس دینے والے کشکول لیے پھر رہے ہیں ، جاوید قصوری

141

لاہور (وقائع نگار خصوصی) امیر جماعت اسلامی پنجاب وسطی محمد جاوید قصوری نے کہا کہ ملکی تاریخ میں پہلی مرتبہ ڈالر 174روپے سے تجاوز کر چکا ہے جبکہ سونے کی قیمت بھی ایک لاکھ 22ہزار روپے فی تولہ ہو گئی ہے۔ غریب عوام جو دو وقت کی روٹی باعزت کما نہیں سکتے، ان کے لیے بیٹیوں کی شادی بیاہ کے موقع پر زیورات بنانا بھی ممکن نہیں رہا۔ مہنگائی نے عوام کو خودکشی پر مجبور کر دیا ہے۔ظالمانہ مہنگائی کے خلاف کل نمازجمعہ کے بعد لاہور سمیت پورے صوبے میں بھر پور احتجاجی مظاہرے کریں گے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز مختلف عوامی وفود سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ مہنگائی نے عملاً غریب عوام کی کمر توڑ کر رکھ دی ہے۔ ایک طرف عوام بد حال ہیں جبکہ دوسری طرف حکمران بڑے قابل فخر انداز قوم کو یہ بھی نوید سنارہے ہیں کہ آئی ایم ایف سے مذاکرات کامیاب ہو ںگے۔جو وزیر اعظم عمران خان آئی ایم ایف کے پاس جانے کے بجائے خود کشی کو ترجیح دینے کی باتیں کرتے تھے، آج وہی آئی ایم ایف، ورلڈ بینک اور دیگر عالمی مالیاتی اداروں کے سامنے کشکول لیے پھرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ معروف بین الاقوامی جریدے ’’دی اکانومسٹ‘‘ کی رپورٹ کے مطابق پاکستان دنیا کا چوتھا مہنگا ترین ملک بن چکا ہے۔ 43ممالک میں ارجنٹائن پہلے، ترکی دوسرے، برازیل تیسرے اور پاکستان چوتھے نمبر پر ہے۔ عوام کا معیار زندگی بہت بری طرح متاثر ہوا ہے۔ محمد جاوید قصوری نے اس حوالے سے مزید کہا کہ پی ٹی آئی کے دور حکومت میں ڈالر39.9فیصد اور پیٹرول کی قیمت میں 44.68فیصد اضافہ ہوا ہے۔مئی سے اب تک پاکستانی روپیہ 12فیصد تک گر چکا ہے اور یہ سلسلہ مسلسل جاری ہے۔