نوجوانوں اور بچوں کو آن لائن غیر اخلاقی مواد سے بچانا ہوگا،وزیر اعظم

162

اسلام آباد (اے پی پی) وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ نوجوانوں بالخصوص بچوں کو آن لائن دستیاب غیر اخلاقی مواد سے بچانے کی ضرورت ہے۔ جدید ٹیکنالوجی کے دور میں نسلِ نو کی کردار سازی بہت اہم ہے۔ انہوں نے ان خیالات کا اظہار جمعرات کو ملک میں فحش ویب سائٹس کو بلاک کرنے سے متعلق اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ وزیر اعظم نے کہا کہ جدید ٹیکنالوجی کے آلات اور تھری جی اور فور جی انٹرنیٹ کے پھیلا ئونے لوگوں کی ہر قسم کے مواد تک رسائی ممکن بنا دی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں اپنے نوجوانوں بالخصوص بچوں کو آن لائن دستیاب غیر اخلاقی مواد سے بچانے کی ضرورت ہے۔وزیر اعظم نے متعلقہ حکام کو ہدایت کی کہ وہ آن لائن مواد کی مؤثر گیٹ کیپنگ کو یقینی بنائیں تاکہ معصوم دماغوں کو آن لائن غیر اخلاقی اور فحش مواد کے اثر سے بچایا جا سکے۔اس سے قبل وزیر اعظم کو آگاہ کیا گیا کہ مواد کی ترسیل کے نیٹ ورکس (سی ڈی این) خاص طور پر کلاڈ فیئر ، انٹرنیٹ ٹریفک کے کل شیئر کا 1-2 فیصد حصہ رکھتے ہیں ، انہیں فحش مواد پیش کرنے کی شکایات ہیں۔ دیگر سی ڈی این اپنی پالیسیوں کے مطابق فحش مواد پیش نہیں کرتے۔ وزیراعظم کو یہ بھی بتایا گیا کہ پی ٹی اے کو آئی ایس پیز/سی ڈی اینز کے ساتھ مل کر کام کرنے کی ضرورت ہے تاکہ سی ڈی این ، خاص طور پر کلاڈ فیئر کے ذریعے فحش مواد کو روکا جا سکے۔ پی ٹی اے کو اپنے ویئر ہائوس مینجمنٹ سسٹم (ڈبلیو ایم ایس)کی استعداد کو بڑھانے کی بھی ضرورت ہے تاکہ فحش ویب سائٹس کے کچھ عالمی اور باقاعدگی سے اپ ڈیٹ شدہ ڈیٹا بیس کے ساتھ انضمام کرکے انہیں یو آر ایل اور ڈومین کی سطح پر بلاک کیا جا سکے۔ اجلاس کو بتایا گیا کہ پی ٹی اے اس منصوبے کی فزیبلٹی پر کام کر رہا ہے جس کا نفاذ 2 ماہ کی مدت میں ممکن ہو سکے گا۔ اجلاس میں پروفیسر ڈاکٹر عطا الرحمن ، چیئرمین نیاٹیل راشد خان اور دیگر متعلقہ افسران نے شرکت کی۔