الیکٹرونک ووٹنگ مشین پر یہاں عملدرآمد ممکن نہیں، خورشید شاہ

65

سکھر (نمائندہ جسارت ) پیپلز پارٹی کے مرکزی رہنما خورشید شاہ نے کہا ہے کہ یہاں الیکٹرونک ووٹنگ مشین پر عملدرآمد ممکن نہیں، اتحاد بنتے اور ٹوٹتے رہتے ہیں، عمران خان اگر عقل مند ہوتے تو ملکی مفاد میں اپوزیشن کے ساتھ بیٹھتے، ہم سب کو ملکی سلامتی سب سے زیادہ عزیز ہے، ہماری تو دعا ہے کہ پاک وطن سلامت رہے۔ تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت سکھر کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ سیدھی سے بات ہے کہ پرچی بنائیں ووٹر کو دیں وہ ٹھپا لگا کر بیلٹ باکس میں ڈالے، ورنہ ایسا نا ہو کہ ٹھپا لگے شیر پر اور نکلے تیر پر۔ انہوں نے کہا کہ ملک میں تبدیلی تو آئی ہے، ڈالر 170 پر پہنچ گیا، مہنگائی بڑھ گئی، ملک بھر میں لوگوں کو بیروزگار کیا جارہا ہے، امن و امان کی صورتحال خراب ہے، قرضے اتارنے کی حقیقت سامنے نہیں آرہی یہ بھی تبدیلی ہے، یہ خارجہ پالیسی کی ناکامی ہے کہ نیوزی لینڈ کرکٹ ٹیم یہاں آکر واپس گئی ہے، یہ دیکھنا چاہیے کہ غیر ملکی ٹیمیں یہاں کھیلنے کیوں نہیں آرہی ہیں۔ قبل ازیں احتساب عدالت سکھرمیں سید خورشید شاہ کیخلاف آمدن سے زائد اثاثہ جات ریفرنس کی سماعت ہوئی، خورشید شاہ اور ان کے صاحبزادے رکن صوبائی اسمبلی سید فرخ شاہ کو سینٹرل جیل سکھر سے عدالت لایا گیا، دیگر ملزمان بھی پیش ہوئے، وکلا کے مختصر دلائل کے بعد سماعت 5 اکتوبر تک ملتوی کردی گئی۔