نیوزی لینڈ اورانگلینڈ کا دورہ منسوخ ہونے پر سابق کرکٹرز کا ردعمل

103

راولپنڈی (نمائندہ خصوصی) پاکستان سے سیریز کھیلنے کے لیے رضامند ہونے کے بعد نیوزی لینڈ اور انگلینڈ کی کرکٹ ٹیموں کے انکار کے بعد دنیا میں دونوں ملکوں کی کرکٹ انتظامیہ کو تنقید کا نشانہ بنایا جارہاہے وہیں پاکستان کے لیجنڈز کرکٹرز نے بھی اپنے ردعمل کا اظہار کیا ہے۔ سابق وکٹ کیپر و کپتان معین خان کا کہنا تھا کہ دونوں ٹیموں کا دورہ پاکستان ملتوی کرنے کا فیصلہ افسوسناک ہے، عالمی سطح پر بھی اس فیصلے کی مذمت کی گئی ہے، سابق فاسٹ بولر اور کپتان وسیم اکرم کا کہنا تھا کہ پاکستان کرکٹ بورڈ اور ہماری عوام نے ملک میں انٹرنیشنل کرکٹ کی واپسی کے لیے بہت محنت کی، اس فیصلے سے جتنی مایوسی آپ کو ہے، اتنی ہی مجھے بھی ہے۔ اب ہم سب کو مل کر ورلڈکپ کے لیے اعلان کردہ اسکواڈ کی حمایت کرنی ہے، جب ٹیم اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کرے گی تو سب ٹیمیں ان کے پیچھے بھاگیں گی۔ سابق وکٹ کیپر و کپتان راشد لطیف کا کہنا تھا کہ پاکستان ایک محفوظ ملک ہے۔انگلینڈ اور نیوزی لینڈ کو پاکستان کا دورہ کرنا چاہیے تھا،انہوں نے کہا کہ میرے خیال میں پی سی بی کو نیوزی لینڈ سے دوبارہ رابطہ کرنا چاہیے۔