صوبائی وزیرتیمور تالپورفردوس شمیم نقوی کے سوال پرآگ بگولہ

72

کراچی (اسٹاف رپورٹر ) سندھ کے صوبائی وزیر تیمور تالپور نے کہا ہے کہ حکومت سندھ کا محکمہ انفارمیشن ٹیکنالوجی 9سو سیکرٹریٹ کے ملازمین کو انفارمیشن ٹیکنالوجی کی تربیت دے رہے ہیں، اس کورس کے لیے میٹرک پاس ہونا ضروری ہے، انفارمیشن ٹیکنالوجی کی تربیت کے لیے کوئی بھی اپلائی کرسکتا ہے۔انہوں نے یہ بات جمعہ کو سندھ اسمبلی میں محکمہ انفارمیشن ٹیکنالوجی سے متعلق وقفہ سوالات کے دوران ارکان کے مختلف تحریری اور ضمنی سوالوں کا جواب دیتے ہوئے کہی۔انہوں نے بتایا کہ خواتین او رمرد وں کو تربیت حاصل کرنے کے یکساں مواقع حاصل ہیںاس ضمن میں کوئی تفریق نہیں کی جاتی۔ وقفہ سوالات کے دوران فردوس شمیم نقوی اور صوبائی وزیر تیمور تالپور کے درمیان کئی مرتبہ نوک جھونک بھی ہوئی۔ وقفہ سوالات کے دوران جب اپوزیشن ارکان کی جانب سے تیمور تالپور پر کچھ آوازیں کسیں توانہوں نے کہا کہ دہشت گردوں کی بات ایم کیو ایم کررہی ہے جس نے پوری زندگی بانی ایم کیو ایم کی گود میں گزاری ہے۔ تیمور تالپور پی ٹی آئی رکن فردوس شمیم نقوی کے ایک سوال پر آگ بگولہ ہوگئے اور انہوں نے کہا کہ ایسے کم عقل لوگ پی ٹی آئی میں ہی ملتے ہیں۔تیمور تالپور نے کہا کہ آئی ٹی محکمہ پر ایک روپے کی کرپشن کوئی ثابت نہیں کر سکتا۔ خرم شیر زمان نے کہا کہ ان لوگوں کے برے کارناموں کی وجہ سے ان کا منہ کالا ہوا ہے۔ خرم شیر زمان کی اس بات پر ایوان میں شور شرابہ شروع ہوگیا۔