اعجاز جاکھرانی کی عبوری ضمانت قبل از گرفتاری میں توسیع

84

کراچی (اسٹاف رپورٹر) سندھ ہائیکورٹ نے صوبائی مشیر جیل خانہ جات اعجاز جاکھرانی کی درخواست ضمانت 4 اکتوبر تک ملتوی کردی۔ دوران سماعت نیب کاکہناتھا کہ محکمہ تعلیم کے مشیر کی حیثیت سے کرپشن میں ملوث اعجاز جاکھرانی عدالت عظمیٰ سے ضمانت پر ہیں، اس
لیے گرفتار نہیں کر سکتے۔اعجاز جاکھرانی کے وکیل کاکہناتھا کہ نیب کا مؤقف بدنیتی پر مبنی ہے۔ نیب کاکہناتھا کہ اعجاز جاکھرانی کے خلاف نیب نے متعدد انکوائریز شروع کی ہوئی ہیں، عدالت عظمیٰ نے ضمانت منظورکی تو 2 ماہ بعد نیب نے کال اپ نوٹس جاری کردیا۔ عدالت کاکہناتھا کہ عدالت عظمیٰ میں معاملہ ہونے کی صورت میں ہم کیسے سماعت کر سکتے ہیں، آپ پہلے عدالت عظمیٰ سے درخواست واپس لیں تو اس درخواست کی سماعت کرسکتے ہیں۔10 دن میں اس بارے میں فیصلہ کرکے آگاہ کریں،اعجاز جاکھرانی کی عبوری ضمانت قبل از گرفتاری میں توسیع کرتے ہوئے سماعت 4 اکتوبر تک ملتوی کردی۔علاوہ ازیں سندھ ہائیکورٹ نے ڈی آئی جی منیر شیخ، فدا مستوئی، ایس ایس پی اعجاز شیخ اور دیگر کے تبادلوں کے خلاف درخواستیں مسترد کردیں۔