پیٹرول، ڈیزل اور مٹی کے تیل کی قیمتوں میں ہوشربا اضافہ کیا گیا

43

فیصل آباد (وقائع نگار خصوصی) کسان بورڈ کے ڈویژنل صدر علی احمدگورایہ نے کہا ہے کہ بجلی اور پیٹرولیم قیمتوں میں اضافہ سے صنعت و زراعت کا بھٹہ بیٹھ جائے گا۔ ٹیوب ویل اور زرعی مشینری بند ہوجائے گی۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت نے مہنگائی کے ریکارڈ توڑ دیے ہر ماہ بجلی اور پیٹرول کی قیمتوں میں اضافہ، منی بجٹ لانے کے مترادف ہے۔ کشکول توڑنے کا دعویٰ کرنے والے آئی ایم ایف کے اشاروں پر عوام کو مہنگائی کی چکی میں پیسنے پر تلے ہوئے ہیں۔ غریب آدمی کا کچومر نکل چکا ہے۔ چودھری علی احمدگورایہ نے ڈیزل اور بجلی کی قیمتوں میں حالیہ اضافے کو کسانوں اور پوری قوم کا استحصال قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ تیل اور بجلی کی قیمتوں میں ہوشربا اضافے سے ہزاروں ٹیوب ویل بند ہوجائیں گے اور زرعی مشینری کا پہیہ جام ہوجائے گا۔ انہوں نے کہا جب سے موجودہ حکومت نے اقتدار سنبھالا ہے عوام کو کسی قسم کا کوئی ریلیف نہیں مل سکا۔ انہوں نے کہا بجلی، گیس، پیٹرولیم سمیت اشیا خورونوش کی قیمتوں میں کمی کی بجائے مسلسل اضافہ کرکے عوام کو زندہ درگورکردیا گیا۔ یہ پاکستان کے عوام کے ساتھ ظلم کی بدترین مثال ہے۔ انہوں نے کہا عوام پہلے ہی بجلی کی لوڈشیڈنگ، اووربلنگ، بجلی اور گیس کی قیمتوں میں بے پناہ اضافے سے سخت پریشان ہیں، حکومت نے تیل اور ڈیزل کی قیمت میں اضافہ کرکے ان کی زندگیوں کو اندھیروں میں رکھنے کے احکامات جاری کردیے ہیں۔ حکومت عوام کے منہ سے آخری نوالہ بھی چھین لینا چاہتی ہے۔ ملک میں غربت، بے روزگاری کی وجہ سے آئے روز خودکشیاں ہورہی ہیں۔ پیٹرول، ڈیزل اور مٹی کے تیل کی قیمتوں میں ہوشربا اضافہ سے کسانوں کے مسائل میں بہت اضافہ ہوگا اور ملک کی زراعت اورصنعت تباہ ہوجائے گی۔