کندھکوٹ، نوجوان اغوا، 50 لاکھ روپے تاوان طلب

56

کندھکوٹ (نمائندہ جسارت) جوان اغوا، اغواکاروں نے 50 لاکھ تاوان مانگ لیا، ورثا۔ کندھکوٹ کے نزدیک گاؤں لشکر خان سہریانی کا رہائشی نوجوان نثار احمد گولو کو ڈاکوؤں نے کندھکوٹ کے ساقی موڑ سے اغوا کرلیا، ورثاء نے مغوی کا موبائل فون بند جانے پر تلاش کیا۔ ڈاکو نوجوان کو اغوا کرکے کچے کے طرف فرار ہوگئے۔ ڈاکوؤں کی جانب سے مغوی کی بازیابی کے لیے اس کے موبائل نمبر سے ورثاء سے 50 لاکھ روپے تاوان طلب کرلیا ہے۔ ڈاکوؤں نے تاوان نہ دینے کی صورت میں نوجوان کو قتل کرنے کی دھمکی دے دی ہے۔ ہم غریب لوگ ہیں، ہمارے پاس اتنے وسائل نہیں کہ ڈاکوؤں کو پچاس لاکھ روپے دے سکیں۔ ورثاء یاد رہے کہ دس روز قبل بھی ڈاکوؤں نے باگڑی برادری کے 3 افراد کو اغوا کرلیا ہے۔ ضلع کشمور میں ڈاکوؤں کے ہاتھوں اغوا ہونے والے مغویوں کی تعداد 4 ہوگئی ہے۔ فوری طور پر وزیر اعلیٰ سندھ، آئی جی سندھ اور ایس ایس پی کشمور امجد احمد شیخ نوٹس لیکر ہمارے مغوی کو بازیاب کروائیں، ورثاء کا مطالبہ۔