“عالمی اسٹیبلشمنٹ کی منشا کے تحت ملک پر سیکولرازم مسلط کیا جا رہا ہے”

343

لاہور: نائب امیر جماعت اسلامی پاکستان لیاقت بلوچ کا کہنا ہے کہ نظام ریاست مدینہ  میں منظم پروگرام عالمی اسٹیبلشمنٹ کی منشا و ڈکٹیشن کے تحت ملک پر بدترین سیکولرازم مسلط کیا جا رہا ہے۔

منصورہ میں دینی جماعتوں کے قائدین کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے  لیاقت بلوچ نے کہا کہ عمران خان کے بیانیہ اور طرز عمل میں دورنگی ہے، بات اچھی کردیتے ہیں اور عمل ملک و ملت کی تباہی کا کرتے ہیں۔

نائب امیر جماعت اسلامی پاکستان کا کہنا تھا کہ  اسلامی نظریہ اور نظام تعلیم کو مسلسل ناقابل تلافی نقصان پہنچایا جارہا ہے، ملک بھر کی دینی اور نظریاتی قوتوں کو خواب غفلت سے بیدار ہونا ہوگا، خاموشی، غفلت ناقابل معافی جرم بن جائے گا۔

لیاقت بلوچ  نے کہا کہ حکومت معیشت کی بحالی اور بہتری کے دعوے کرتی ہے لیکن روپے کی قدر ختم اور ڈالر کی اونچی اڑان ہے۔ تیل، گیس ٹیکسوں کی شرح میں ہوشربا اضافہ عوام کے لیے ڈیتھ وارنٹ بن گیا ہے۔

لیاقت بلوچ نے مزید کہا کہ عوام مہنگائی کی سونامی میں ڈوب رہے ہیں اور حکمران سکھ کی بانسری بجارہے ہیں اور عمران خان میڈیا سمیت دیگر اداروں کو غلام بنانے کے لیے آمرانہ عزائم کے تحت ایڑی چوٹی کا زور لگارہے ہیں۔