اثاثے ظاہر کرنیوالوں کو ٹیکس جمع کرنے کی اجازت دی جائے‘ فیاض الیاس

52

کراچی(نمائندہ جسارت) ایسوسی ایشن آف بلڈرز اینڈ ڈیولپرز(آباد) کے چیئرمین فیاض الیاس نے وزیراعظم عمران خان،وفاقی وزیرخزانہ شوکت ترین اور ایف بی آر چیئرمین محمد اشفاق احمد سے مطالبہ کیا ہے کہ ایسٹ ڈیکلریشن آرڈیننس 2019ء کے بعد اثاثہ جات ظاہر کرنے والوں کو ٹیکس جمع کرانے کی اجازت دی جائے۔ چیئرمین فیاض الیاس نے ایف بی آر کی جانب سے تمام ٹیکس دہندگان / افراد جنہوں نے 3 جولائی 2019 کو ٹیکس جمع کرائے لیکن اپنے
اثاثہ جات ظاہر نہیں کیے ان کے لیے اثاثہ جات ظاہر کرنے کی تاریخ میں 25 ستمبر 2021 تک ڈیکلریشن فائل کرنے کی اجازت دینے کی فیصلے پر رد عمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ اثاثہ جات ظاہر کرنے کے آرڈیننس کے بعد بہت سارے افراد نے اپنے اثاثہ جات تو ظاہر کردیے لیکن وہ 3 جولائی 2019 تک ٹیکس جمع نہیں کراسکے۔انھوں نے کہا کہ ایسے اثاثہ جات ظاہر کرنے والے افراد کو ٹیکس جمع کرنے اجازت دی جائے۔ چیئرمین فیاض الیاس کا کہنا ہے کہ ایک بہت بڑی تعداد ہے جس نے اثاثہ جات تو ظاہر کردیے لیکن کسی وجوہ کے باعث 3 جولائی 2019 کو ٹیکس جمع کرانے سے رہ گئے ہیں،ایسے افراد کو ٹیکس جمع کرانے کی اجازت دینے سے ملکی خزانے کو اربوں روپے کا فائدہ ہوگا اور ایف بی آر کا سال 2021-22 کا ٹیکس وصولی کا ہدف 5800 ارب روپے پورا کرنے میں مددگار ثابت ہوگا۔