طالبان کو حکومت سازی اور ملکی امور چلانے کیلئے وقت دینا چاہئے،شیخ رشید

133
اسلام آباد: وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید اقوام متحدہ کے ہائی کمشنر برائے مہاجرین فیلپو گرانڈی کو گلدستہ پیش کررہے ہیں

؎اسلام آباد (اے پی پی)وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ پاکستان افغانستان میں پائیدار امن کا خواہشمند مند ہے،دنیا کو افغانستان میں زمینی حقائق سمجھنے کی ضرورت ہے،طالبان کو حکومت سازی اور ملکی امور چلانے میں وقت دینا چاہیے۔ ان خیالات کا اظہارانہوں نے اقوام متحدہ کے ہائی کمشنر برائے مہاجرین فیلپو گرانڈی سے گفتگو کرتے ہوئے کیا جنہوں نے جمعرات کو یہاں ان سے ملاقات کی۔ ملاقات میں افغانستان سے انخلا اورافغان شہریوں کیلیے انسانی امداد سے متعلق بات چیت کی گئی ۔ ملاقات میں اتفاق کیا گیا کہ افغان شہریوں کو موجود ہ حالات میں تنہا نہیں چھوڑا جائے گا اور انسانی بنیادوں پر افغان شہریوں کے لیے خوراک، ادویات اور دیگر ضروری اشیا کا بندوبست کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ طالبان کو افغانستان میں گورننس کیلیے مالی اور انسانی وسائل یقینی بنانا ہوں گے۔ طالبان کے زیر قیادت حکومت میںافغانستان کی ایک ہی دن میں یورپ کی طرح ترقی ممکن نہیں ۔افغانستان میں ممکنہ انسانی قحط بے امنی اور لاقانونیت کو جنم دے سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ انسانی ہمدردی کے تحت خوراک اور ادویات کے ٹرک اور جہاز افغانستان بھیجے ہیں ۔ موجودہ حالات میں پاکستان افغان شہریوں کی انسانی ہمدری کی بنیاد پر امداد جاری رکھے گا۔ ملاقات میں ہائی کمشنر برائے مہاجرین فیلپو گرانڈی نے کہاکہ پاکستان کا 30 لاکھ افغان مہاجرین کی مسلسل دیکھ بھال میں کردار قابل رشک ہے۔ اقوام متحدہ افغان شہریوں کو تنہا نہیں چھوڑے گا،ان کی ہر ممکن مدد کریں گے۔ اقوام متحدہ نے افغانستان کے لیے فنڈز اورامدادکیلیے اقوام عالم کو متحرک کیا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ اقوام متحدہ کے عملے کی سکیورٹی اور ویزہ سہولیات فراہم کرنے پر حکومت پاکستان کے ممنون ہیں ۔