لاہور ہائیکورٹ‘دوسری شادی کرنیوالے شوہروں کے ٹرائل کالعدم قرار

234
لاہور (نمائندہ جسارت)لاہور ہائیکورٹ نے مجسٹریٹس کو پہلی بیوی کی بلا اجازت دوسری شادی کرنے والے شوہروں کے ٹرائل سے روک دیا۔ دوسری شادی کرنے والے شوہروں کے ٹرائل سے متعلق لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس امجد رفیق نے فیصلہ جاری کردیا۔ جسٹس امجد رفیق نے قانونی نکتہ طے کردیا کہ پنجاب بھر کے مجسٹریٹس پہلی بیوی کی اجازت کے بغیر دوسری شادی کرنے والے ملزم شوہروں کے ٹرائل نہیں کر سکتے۔ ہائیکورٹ نے پنجاب بھر کے مجسٹریٹس کو دوسری شادی کے کیسز کے ٹرائل کرنے سے روک دیا۔ فیصلے میں کہا گیا کہ فیملی کورٹ کے1964ء کے ایکٹ کے سیکشن20 کے تحت صرف فیملی عدالتوں کو مسلم فیملی لا آرڈیننس کے کیسز سننے کا اختیار ہے، مجسٹریٹس کی جانب سے ایسے کیسز کا ٹرائل کرنا آئین کی خلاف ورزی ہے۔