اسٹاک مارکیٹ بدترین مندی کی لپیٹ میں آ گئی

105

کراچی(اسٹاف رپورٹر)ایک دن کی تیزی کے بعد منگل کو پاکستان اسٹاک مارکیٹ بدترین مندی کی لپیٹ میں آ گئی جس کے باعث کے ایس ای100انڈیکس 300پوائنٹس گھٹ گیا اور انڈیکس 47ہزار پوائنٹس کی نفسیاتی حد سے گر کر 46800 پوائنٹس کی کم ترین سطح پر بند ہوا،مندی کے باعث مارکیٹ میں سرمایہ کاروں کے 1 کھرب روپے سے زائد ڈوب گئے جس کے نتیجے میں سرمائے کا مجموعی حجم 82کھرب روپے سے کم ہوکر 81 کھرب روپے کی کم ترین سطح پر آگیا جبکہ78.25 فیصد حصص کی قیمتیں بھی گھٹ گئیں۔پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں منگل کو مارکیٹ ٹریڈنگ کے دوران دبائو کا شکار رہی جس کی وجہ سے نہ صرف نئی سرمایہ کاری کا سلسلہ رک گیا بلکہ منافع کی خاطر فروخت کارجحان بھی بڑھ گیا یہی وجہ مارکیٹ کی تنزلی کا سبب بتائی جاتی ہے ۔ پاکستا ن اسٹاک مارکیٹ میں منگل کو کے ایس ای 100 انڈیکس میں379.12پوائنٹس کی کمی واقع ہوئی جس سے انڈیکس 47270.46 پوائنٹس سے کم ہو کر 46891.34 پوائنٹس ہو گیا اسی طرح 194.11 پوائنٹس کی کمی سے کے ایس ای 30 انڈیکس 18796.97پوائنٹس سے کم ہو کر 18602.86 پوائنٹس پر آگیا جبکہ کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس 32503.33 سے کم ہو کر 32151.56 پوائنٹس پر بند ہوا ۔ کاروباری مندی کے سبب مارکیٹ کے سرمائے میں1 کھرب 39 کروڑ 98 لاکھ 60 ہزار653روپے کی کمی واقع ہوئی جس کے نتیجے میں سرمائے کا مجموعی حجم 82 کھرب 76 ارب 39 کروڑ 97 لاکھ 40 ہزار 63روپے سے کم ہو کر81 کھرب 75 ارب 99 کروڑ 98 لاکھ 79 ہزار 410روپے ہو گیا ۔