اہلسنت والجماعت کے تحت یوم شہادت عمرؓ پر تاریخی جلو س نکالاگیا

62

کراچی (اسٹاف رپورٹر )اہلسنّت والجماعت کراچی ڈویژن کی زیر پرستی عظیم الشان فقید المثال مدح صحابہ واحتجاجی جلوس بسلسلہ یکم محرم الحرام یوم شہادت خلیفہ ثانی سسر رسول حضرت عمر فاروق ؓ نکالا گیا،شہرکراچی کے 18 ٹاؤنز سے بڑی تعداد پر مشتمل 18 جلوس نکالے گئے جو آگے لسبیلہ پہنچ کر ایک مرکزی اور بڑے جلوس کی شکل اختیار کر گیا، تاریخ کا بہت بڑا جلوس لسبیلہ سے مزارقائد تک پیدل روانہ ہوا حکومت کی جانب سے دی گئی مکمل فول پروف سیکورٹی میں ، اس جلوس میں بچے بوڑھے اور جوان بلکہ کچھ معذور افراد بھی شامل تھے جو حضرت عمر فاروق ؓسے محبت کا اظہار کرنے جلوس میں شریک تھے، مجمع عام میں پلے کارڈ اٹھا رکھے تھے جن پر حضرت عمر فاروق ؓ کی شان و منقبت میں مختلف احادیث درج تھیں اور حکومت وقت سے اس دن کو سرکاری سطح پر منانے کے مطالبے بھی درج تھے ۔ حضرت عمرؓ کی شان میں اتنے نعرے لگے کہ پورا شہر کراچی عمرعمر،عمرعمر، عمرعمر کے نعروں سے گونج اٹھا، جلوس کی قیادت قائد ملت اسلامیہ، سفیر امن حضرت مولانا محمد احمدلدھیانوی مرکزی سرپرست اہل سنت والجماعت،علامہ غازی اورنگزیب فاروقی مرکزی صدر اہلسنّت والجماعت پاکستان، قائد کراچی مولانا ربنواز حنفی ودیگر ڈویژنل ذمے داران کررہے تھے،، اہلسنّت والجماعت کراچی ڈویژن کے ذمے داران مولانامحی الدین شاہ‘ سلیم کھتری، قاری عبدالوہاب، امیر فضل خالق ، مولانا شکیل الرحمن فاروقی ،مولانا عبدالرافع شاہ بخاری ترجمان کراچی مولاناعمرمعاویہ ودیگر رہنماؤں نے خصوصی خطاب کیا،مقررین کا کہنا تھا کہ ہم حکومت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ انہیں عظیم المرتبہ صحابی خلیفہ دوم حضرت عمر فاروق ؓکے یوم شہادت پر عام تعطیل کا اعلان کرکے اسے سرکاری سطح پر خراج عقیدت پیش کی جائے،پرنٹ میڈیا،الیکٹرونک میڈیا اور ٹی وی چینلز پر ان کے دور خلافت کے خوبصورت کارناموں کا ذکر کیا جائے۔مقررین نے مزیدکہاکہ حضرت عمر فاروقؓ وہ شخصیت ہیں جن کے آنے سے مسلمانوں نے بیت اللہ میں نماز ادا کی۔