یوم استحصال کشمیر پرپاکستان قونصلیٹ جنرل جدہ میں خصوصی تقریب

137

.5 اگست کو یوم استحصال کشمیر پرپاکستان قونصلیٹ جدہ میں قونصل جنرل پاکستان خالد مجید کی زیر صدارت خصوصی تقریب کا اہتمام کیا گیا۔ کوڈ-19 کی احتیاتی تدابیر پرعمل کے باعث تقریب میں محدود تعداد میں مخصوص پاکستانی کمیونٹی، کشمیرکمیٹی جدہ کے ممبران، قونصل خانہ اورعرب میڈیا کے نمائندوں کو مدعو کیا گیا تھا۔
تقریب کا آغاز قاری محمد آصف کی قران پاک کی تلاوت و ترجمہ سے ہوا، جس کے بعد صدرمملکت ڈاکٹر عارف علوی، وزیر اعظم عمران خان اور وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کے خصوصی پیغامات بالترتیب ڈپٹی قونصل جنرل شائق احمد بھٹو، پریس قونصلر سید حمزہ گیلانی اور ویلفیئر قونصلر ماجد حسین میمن نے پڑھ کر سنائے۔ حاضرین سے خطاب پاکستان میں سابق سعودی دفاعی اتاشی عبداللہ الغامدی، بریگیڈیئر جنرل محمد حسن کملی، چیئرمین کشمیر کمیٹی مسعود احمد پوری، چیئرمین جموں وکشمیراوورسیز کمیونٹی چودھری خورشید احمد متیال، ڈاکٹر راسخ الکشمیری نے اپنے خطاب میں اس دن کی اہمیت پر روشنی ڈالی۔ بھارت کےغیر قانونی قبضے اور قابض افواج کی جارحیت، خاص طور پر 5 اگست 2019ء کے بعد کی مذمت کی۔ بھارتی ظلم کے خلاف کشمیریوں کی قربانیوں کو خراج عقیدت پیش کیا۔
قونصل جنرل پاکستان خالد مجید نے اپنےخطاب میں اس بات پر زور دیا کہ بھارتی مقبوضہ جموں و کشمیر(آئی آئی او جے) کے پر اپنے اصولی موقف سے کبھی پیچھے نہیں ہٹے گا۔ اور اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی پے درپے قراردادوں کے ذریعے عالمی برادری سے ان کے وعدے کے مطابق کشمیری عوام کی حق خودارادیت کے لیے ان کی منصفانہ جدوجہد میں اخلاقی ، سیاسی اور سفارتی حمایت کا اعادہ کیا۔ تمام مقررین نے سعودی حکومت اور او آئی سی کی طرف سے کشمیر کاز کی مستقل حمایت کو بھی تسلیم کیا اور سراہا۔ اس کے علاوہ پاکستان میں سعودی عرب کے سابق سفیر ڈاکٹر علی اودھ عسری اور سابق سعودی سفارت کار،اسکالراور کالم نویس ڈاکٹر علی الغامدی کے ریکارڈ شدہ پیغامات سامعین کو دکھائے گئے اور مقبوضہ جموں و کشمیر کی موجودہ صورتحال پر ایک مختصر دستاویزی فلم دکھائی گئی۔
تقریب کا اختتام کشمیریوں کی حق خود ارادیت کے لیے جدوجہد کی کامیابی کے لیے اجتماعی دعا کے ساتھ ہوا۔ تقریب میں نظامت کے فرائض کمرشل قونصلر سید عبدالوحید شاہ نے انجام دیے تھے۔