شنگھائی تعاون تنظیم کے اہداف کے حصول کیلیے پرعزم ہیں، فروغ نسیم

47

اسلام آباد (اے پی پی) وفاقی وزیر برائے قانون و انصاف بیرسٹر ڈاکٹر محمد فروغ نسیم نے کہا ہے کہ قانون کی بالادستی، قانون میں سب کیلیے مساوات اور احتساب سے شنگھائی تعاون تنظیم کے رکن ممالک کی طویل مدتی پائیدار ترقی، شرح نمو اور استحکام یقینی بنایا جاسکتا ہے، پاکستان 2025ء تک ایس سی او ترقیاتی حکمت عملی کے اہداف کے حصول کیلیے پرعزم ہے۔ ا ن خیالات کا اظہار انہوں نے شنگھائی تعاون تنظیم )ایس سی او( کے رکن ممالک کے وزرا انصاف کے 8ویں اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ شنگھائی تعاون تنظیم کے 20 سال مکمل ہونے پر شنگھائی تعاون تنظیم کے رکن ممالک کے وزرا انصاف کو دلی مبارکباد دیتا ہوں۔ شنگھائی تعاون تنظیم میں اتفاق رائے پر مبنی فیصلہ سازی کے باعث اس فورم کو اقوام عالم میں منفرد مقام حاصل ہے، پاکستان اس فورم کا رکن بننے کے بعد سے قانون و انصاف میں تعاون کے فروغ کیلیے اہم کردار ادا کر رہا ہے۔ پاکستان علاقائی شراکت داروں کے ساتھ تعلقات کے فروغ کیلیے اس فورم کو انتہائی اہم سمجھتا ہے، ہم قانون کی بالادستی اور کرپشن کی روک تھام اور میوچل لیگ اسسٹنٹس کے امور کے فروغ کیلیے مل کر کام کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ شنگھائی تعاون تنظیم کے رکن ممالک کے درمیان قانونی نظام میں بہتری کیلیے کوئی باہمی مفاہمت نہیں ہے، پاکستان نے پسماندہ طبقات کو انصاف تک رسائی کیلیے قانونی اور مالی معاونت فراہم کرنے کیلیے لیگل ایڈ اینڈ جسٹس اتھارٹی ایکٹ منظور کیا ہے، کورونا وبا کے باعث عالمی سطح پر کئی چیلنجز پیدا ہوئے ہیں، پاکستانی عدالتوں میں ملک بھر میں معزز ججز، وکلا اور عملے کے تحفظ کیلیے فوری بنیادوں پر مقدمات کو نمٹانے کا اقدام کیا گیا ہے تاہم اس وقت ملک میں بعض ضلعی عدالتیں اور ٹریبونلز مکمل طور پر فعال ہیں۔