کشمیر میں بھارتی فوج کا قتل عام کھلی دہشت گردی ہے ، ذکراللہ مجاید

50

لاہور (نمائندہ جسارت) امیر جماعت اسلامی لاہور میاں ذکر اللہ مجاہد نے کہا ہے کہ کشمیر میں بھارتی فوج کاظلم و جبراور انسانیت کا قتل عام کھلی دہشت گردی ہے ۔ دو سال سے غیور اور بہادر کشمیری عوام بھارتی ظلم و جبر کے سامنے سیسہ پلائی دیوار بنے ہوئے ہیں۔کشمیر میں 732 دن سے بھارتی فوج کا غاصبانہ قبضہ اقوام متحدہ اور عالمی برداری کے منہ پر طمانچہ ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے عید ملن اجتماعی ناشتہ تقریب میں 5اگست یوم استحصال کے حوالے سے شرکاء تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ تقریب میں وقاص احمد بٹ ،نوید حیدر بھٹی، اظہر بلال سمیت بڑی تعداد میں اہل علاقہ نے شرکت کی۔ میاں ذکر اللہ مجاہد نے مزید کہا کہ گزشتہ سات دہائیوں سے عالمی برادری اور اقوام متحدہ بھارت کو کشمیریوں پر ظلم کرنے سے باز رکھنے میں مکمل ناکام ہوچکی ہے جبکہ دوسری طرف مودی ظالم سرکار ہرگزرتے دن کے ساتھ کشمیر میں انتہا پسندانہ پالیسیوں کے نفاذ پر عمل پیرا ہے اورمقبوضہ کشمیر میں آبادی کا تناسب بدلنے کے لیے پورے بھارت سے لوگوں کو لاکر وہاں بسایا جارہا ہے۔انہوں نے کہا کہ مسئلہ کشمیر پاکستانی حکمرانوں کی بزدالانہ پالیسیوں کی وجہ سے التو ا کا شکار ہے۔وزیر اعظم پاکستان عمران خان صاحب نے بھی اقوام متحدہ میں ایک تقریر اور چند احتجاج کرنے کے سوا کچھ نہیں کیا۔ موجود ہ اورسابقہ حکمرانوں نے مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے کشمیری عوام کی امنگوں کے مطابق اقدامات نہیں کیے جس کی وجہ سے دو ساقبل آج کے دن بھارت نے کشمیر کی قانونی حیثیت ختم کرکے پورے خطے کے امن کو داؤ پر لگا دیا ہے۔ میاں ذکر اللہ مجاہد نے کہا کہ مسئلہ کا حل تقریروں، احتجاجوں اور ملی نغموں سے نہیں بلکہ دلیرانہ فیصلے کرنے سے ہوگا۔پاکستان کا بچہ بچہ بھی کشمیر کی آزادی کے لیے مظلوم کشمیریوں کے شانہ بشانہ کھڑا ہے۔ وزیر اعظیم پاکستان عمران خان کشمیر آزادی کے لیے دو ٹوک مؤقف اختیار کریں اور پورے پاکستان کو ایک روڈ میپ دیں۔