نورمقدم کے قاتل کو سرعام سنگسار کیا جائے، علامہ طاہر اشرفی

77

اسلام آباد (اے پی پی) وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے بین المذاہب ہم آہنگی حافظ محمد طاہر محمود اشرفی نے کہا ہے کہ ریاست مظلوموں کے ساتھ کھڑی ہے، نظام عدل میں تبدیلی کی ضرورت ہے، خواتین کے حقوق کی پاسداری سب پر لازم ہے، نور مقدم ہماری بچی ہے، ملزم کو سرعام سنگسار کیا جائے یا سب کے سامنے سزا دی جائے، اسلام نے بیٹی اور عورت کو سر کا تاج بنایا ہے پائوں کی جوتی نہیں، نبی کریمؐ کی آمد کا ایک مقصد خواتین کو عزت دینا تھا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں اپنی روایات کے مطابق بچوں کا خیال کرنا ہوگا، نور مقدم کا واقعہ بتاتا ہے کہ والدین اور بچوں میں بہت فاصلہ آ چکا ہے، یہ فاصلہ ختم کرنے کی ضرورت ہے، رسول کریمؐ سے زیادہ باعزت کوئی باپ نہیں آیا،
نبی کریمؐ نے بی بی فاطمہؓ کا نکاح کرنے سے پہلے ان کی مرضی پوچھی تھی۔ طلاق کی شرح میں اضافے کی وجہ جذباتی شادیاں ہیں، پیار پر مبنی گھریلو نظام کو مضبوط کرنا ہوگا۔ انہوں نے وزیراعظم عمران خان کو آزاد کشمیر میں انتخابات میں کامیابی پر مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ گزشتہ روز کشمیر کے عوام نے پاکستان کیساتھ محبت کا ثبوت دیا ہے، پاکستان علما کونسل اور علما کی جانب سے وزیراعظم کو مبارکباد دیتا ہوں۔