تحریک انصاف نے آزاد کشمیر انتخابات کو متنازع بنا دیا،نفیسہ شاہ

67

حیدرآباد(اسٹاف رپورٹر)شیخ رشید وو ٹ چوری کرکے حکومتیں بنانے والوں کے سہولت کار ہیں ان کا یہ بیان کہ کشمیر میں پی ٹی آئی جیت گئی ہے اب سندھ کی باری ہے، سراسر سندھ کی جمہوری عوامی مینڈیٹ سے قائم پی پی پی حکومت پر شب خون مارنے کے مترادف ہے جس کی شدید مذمت کرتے ہیں، سندھ میں جی ڈی اے بنائیں یا کوئی اور اتحاد،ووٹ صرف پیپلز پارٹی کا ہے،تحریک انصاف نے ریاستی مشینری کے استعمال کے ذریعے آزاد کشمیر انتخابات کو متنازع بنا دیا ہے ،انتخابات کے دوران فائرنگ، پولنگ اسٹیشن اکھاڑ کر تحریک انصاف نے خونی دھاندلی کی ہے، پیپلزپارٹی کے وکلاءکئی گھنٹوں سے شکایات لیکر سیکرٹری الیکشن کمیشن کے دفتر کے باہر کھڑے رہے مگر الیکشن کمیشن کے افسران اور عملہ دفاتر اور سینٹرل کنٹرول روم میں دستیاب نہیںتھا،آزاد کشمیر الیکشن کمیشن کی یہ صورتحال انتہائی افسوسناک ہے جو کئی سوالات کو جنم دیتی ہے ،شہید ذوالفقار علی بھٹو کو قائد عوام کا خطاب کشمیری رہنما مرشد شاہین گورایا نقشبندی رحمتہ اللہ علیہ نے دیا تھا۔ ان خیالات کااظہارپاکستان پیپلز پارٹی کے مرکزی رہنما ڈاکٹر سیدہ نفیسہ شاہ جیلانی ہا¶س خیرپور میں گورایا خاندان کے افراد کی آمد اور کشمیر کے الیکشن میں پی پی پی کے نامزد امیدواروں کو ووٹ دے کر کامیاب کرانے پر آستانہ عالیہ بھیج پیر جٹا کے زیب سجادہ مرشد احمد سفیان گورایا ایڈووکیٹ۔پیرزادہ احمد مہران گورایا ایڈوکیٹ۔پیرزادہ احمد نعمان گورایا،احمد مردان گورایاا،حمد سبحان گورایا،احمد حماد گورایااور دیگر سے اظہار تشکر کرتے ہوئے بابائے خیرپور،کارکنان تحریک پاکستان عظیم کشمیری رہنما بھیج پیر جٹا پنجم حضرت پیر و مرشد محمد اسحاق شاہین گورایا نقشبندی مرشدی رحمتہ اللہ علیہ کوخراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کیا۔ڈاکٹر سیدہ نفیسہ شاہ جیلانی نے کشمیری وفد سے مذید گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ آزاد کشمیر انتخابات کو پاکستان حکومت اور سہولت کاروںنے بے وقار،گدلا اور متنازع بنا دیا ہے۔ ۔ گلگت بلتستان انتخابات اور اب آزاد کشمیر میں انتخابات سے یہ امر عیاں ہو گیا ریاستی اداے شفاف غیرجانبدارانہ مہذب اور بااعتماد انتخابات کے لیے کوئی وژن اور ارادہ نہیں رکھتے۔ملک بھر میں ملک،جمہوریت، شفاف انتخابات اور باوقار پارلیمانی نظام کی تمنا اور خواب رکھنے والی قوتیںپی پی پی کا ساتھ دیںپیپلزپارٹی ان خدشات کا پہلے دن سے اظہار کرتی رہی لیکن الیکشن کمیشن نے نوٹس تک نہیں لیاڈپٹی اسپیکر قاسم سوری، علی محمد خان اور علی اکین گنڈاپور کی پولنگ اسٹیشنز پر موجودگی نے انتخابی عمل پر سوالیہ نشان اٹھا دیا ہے، وفاقی وزراءاور ڈپٹی اسپیکر نے الیکشن کمیشن کے احکامات کو ہوا میں اڑا دیا،آزاد کشمیر کے انتخابات کی موجودہ صورتحال الیکشن کمیشن کے آئینی کردار پر بھی ایک بہت بڑا سوالیہ نشان ہے