حکومت غریب سے زندہ رہنے کا حق چھیننا چاہتی ہے، حسین محنتی

54

کراچی(اسٹاف رپورٹر)جماعت اسلامی سندھ کے امیر محمد حسین محنتی نے آٹا، گھی ،چینی سمیت اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں ہوشربا اضافے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ کہاں گئے ،پی ٹی آئی قیادت کے عوام کو ریلیف دینے والے وعدے؟ حکومتی ظالمانہ اقدامات سے لگتا ہے کہ وہ غربت کے خاتمے کے بجائے ملک میں غریب ختم کرو کی پالیسی پر عمل پیرا ہے۔ صوبائی امیر نے ایک بیان میں مزید کہا کہ پیٹرول، گیس اور بجلی کے بعد گھی 90 روپے، چینی 17 اور آٹا7 روپے فی کلو یوٹیلیٹی اسٹور پر مہنگا کر کے حکومت غریب عوام سے زندہ رہنے کا حق بھی چھیننا چاہتی ہے۔ غریب عوام کے نام پر ووٹ لیکر اقتدار میں آنے والے سب سے زیادہ ظلم ، نا انصافی اور استحصال کا نشانہ عوام ہی کو بنا رہے ہیں، جو کہ حکومتی وعدوں اور دعوئوں کی نفی ہے۔ انہوں نے کہا کہ نوکریاں، گھر، بجلی کی لوڈشیڈنگ کے خاتمے کی طرح عوام کو ریلیف دینے کا دعویٰ بھی جھوٹ کا پلندا ثابت ہوا ہے۔ مہنگائی و بیروزگاری کی وجہ سے لوگ سخت پریشان ہیں۔ عام آدمی2 وقت کی روٹی کو ترس گیا ہے۔ صوبائی امیر نے زور دیا کہ حکومت اشیائے ضروریہ کی قیمتوں پر کنٹرول اور مہنگائی کے خاتمے سمیت عام آدمی کو ریلیف دینے کے لیے سنجیدہ اقدامات کر کے انتخابات میں قوم سے کیے گئے وعدے پورے کرے۔