رپورٹ: چین میں کاسمیٹک سرجری کروانے والوں میں اضافہ

162

بیجنگ: چین میں کاسمیٹک سرجری کروانے والوں کی تعداد بڑھ رہی ہے اور امریکا کے بعد چین دنیا کا دوسرا بڑا سرجری کرنے والا ملک بن گیا ہے جبکہ چین میں کاسمیٹک سرجری کروانے والوں کی فہرست میں سب سے زیادہ تعداد نوجوان خواتین کی ہے۔

بین الاقوامی رپوٹس کے مطابق  خوب صورت نظر آنے کے لیے کاسمیٹک سرجری کا رجحان دنیا بھر میں بڑھتا جا رہا ہے، چین میں بھی پلاسٹک سرجری کروانے والوں کی تعداد میں بے پناہ اضافہ دیکھا گی جبکہ چین میں کاسمیٹک سرجری کے لئے سوشل میڈیا ایپ گینگمی (جس کا مطلب ہے زیادہ خوب صورت) پر لوگ اپنے اسٹیٹس لگاتے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق سال 2013 میں لانچ کیے جانے کے بعد اس ایپ کے صارفین 1 ملین سے بڑھ کر 36 ملین ہوچکے ہیں اور اس کے نصف سے زیادہ صارفین نوجوان خواتین ہیں اوریہ ایپ کاسمیٹک سرجری نیٹ ورک کے متعلق ہے۔

چین میں کاسمیٹک سرجری کروانے والوں کی فہرست کے مطابق سال 2018 میں کاسمیٹک سرجری پلیٹ فارم سوینگ پر صارفین کی تعداد 1.4 ملین سے بڑھ کر 8.4 ملین تک ہوگی ہے۔

رپورٹ کے مطابق چین میں کاسمیٹک مارکیٹ کی قیمت چار سال میں تقریبا 177 ارب یوآن تک پہنچ گئی ہے جبکہ سرجری میں سب سے بہتر سرجن ان کو سمجھا جاتا ہے جو  ڈبل پلکیں اور وی  سائز کے جبڑوں کی لکیریں تیار کرتے ہیں۔

روسن جو کہ ایک فیشن انڈسٹری میں کام کرتی ہیں ان کا کہنا ہے کہ  ان کے دوست کاسمیٹک سرجری کے متعلق کھل کر بات کرتے ہیں۔  چین میں 2019 کے ریکاڈ کے مطابق 60 ہزار سے زیادہ لائسنس یافتہ پلاسٹک سرجری کے کلینک ہیں۔

کاسمیٹک سرجری میں بہت سی خرابیاں بھی پائی جاتی ہیں جن کی تصاویر اکثر سوشل میڈیا پر شیئرکی جاتی ہیں جبکہ ایک اداکارہ نے کاسمیٹک طریقہ کار کی آن لائن تصاویر شیئر کی جس میں کاسمیٹک سرجری کے بعد ناک کی اصل شکل خراب ہو گئی ہے۔

دوسری جانب کاسمیٹک سرجری خراب ہونے پر اسپتالوں کو 49 ہزار یوآن جرمانہ کیا گیا ہے جبکہ گزشتہ ماہ چین کے نیشنل ہیلتھ کمیشن نے بغیرلائسنس کاسمیٹک سرجری فراہم کرنے والوں کیخلاف ایک مہم کا اعلان بھی کیا ہے۔