کوچنگ سے استعفیٰ دینے کے معاملے پر یونس خان بھی بول پڑے

202

کراچی: قومی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان اور بیٹنگ کوچ یونس خان بھی استعفیٰ دینے کے معاملے پر بول پڑے ہیں۔

نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے یونس خان نے بتایا کہ حسن علی اور میرے درمیان تکرار عہدہ چھوڑنے کی وجہ نہیں ہے، یونس خان نے بتایا کہ آئس ٹب لینے کے معاملے پر ٹرینر یاسر ملک نے کہا کہ آپ حسن علی کو میری بات ماننے کے لیے قائل کریں، اس معاملے پر حسن علی نے مجھ سے معافی مانگی اور میں اسے گلے لگا چکا ہوں۔

سابق کپتان قومی ٹیم نے کہا کہ میرے استعفے میں حسن علی کے واقعے کو بڑھا چڑھا کر پیش کرنا حیران کن ہے، میری جانب سے استعفے پر خاموشی، بورڈ اور پاکستان کرکٹ کے وسیع تر مفاد میں تھی، یونس خان نے کہا کہ میں نے کبھی عہدے اور نوکری کے لیے بورڈ کی طرف نہیں دیکھا۔

خیال رہے کہ یونس خان کے بطور بیٹنگ کوچ استعفے کے حوالے سے کہا جا رہا تھا کہ ان کا غیر ملکی دورے کے دوران کسی ایک کرکٹر سے جھگڑا ہوا تھا۔اس کے علاوہ میڈیا پر اس قسم کی اطلاعات بھی سامنے آئی تھیں کہ یونس خان کے ٹیم میجنمنٹ کے ساتھ تعلقات بھی اچھے نہیں تھے۔